.

ایرانی اداکارہ کا نامحرم کو 'بوسہ'، تہران میں طوفان

لیلی حاتمی نے کینز فلمی میلے کے سربراہ کا منہ چوما تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کے شہر کینز میں منعقدہ بین الاقوامی فلمی میلے کے موقع پر ایرانی اداکارہ لیلی حاتمی نے میلے کے سربراہ جائلز جیکب کا منہ چوم کر اپنے لیے مشکلات کا ایک پہاڑ کھڑا کر لیا ہے۔

یاد رہے کہ اسلامی ملک کی خواتین کا کسی غیر محرم مرد کو بوسہ پاکدامنی کی اسلامی روایات کی خلاف ورزی سمجھا جاتا ہے۔ ایرانی ذرائع ابلاغ میں حاتمی کی جائلز جیکب کی گال پر 'تہنیتی بوسہ' پر مبنی تصاویر کی اشاعت سے ملک میں ان کے خلاف تنقید کا لامتناہی سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔

سرکاری ریڈیو کی ویب سائٹ پر اپنے بیان میں ثقافت کے وزیر مملکت حسین نوشہابدی نے کہا ہے کہ "بین الاقوامی پروگراموں میں شرکت کرنے والوں کو ایرانیوں کے تقدس کا خیال رکھنا چاہیے تاکہ دنیا کے سامنے ایرانی خواتین کی بری تصویر سامنے نہ جائے۔" بہ قول نوشہابدی "ایرانی خواتین پاکدامنی اور معصومیت کی علامت ہیں۔" حاتمی کی میلے میں "غیر مناسب نمائندگی" ہمارے "مذہبی عقائد سے ہم آہنگ نہیں تھی۔"

فلمی گھرانے میں پیدا ہونے والی لیلی حاتمی کو مشہور ہدایت کار اصغر فرہندی کی فلم 'ایک علاحدگی" میں اپنے لازوال کردار کی وجہ سے شہرت پائی۔ ان کی اس فلم کو سنہ 2012ء میں غیر ملکی زبان میں بننے والی فلموں کی کیٹگری میں اکیڈیمی ایوارڈ بھی مل چکا ہے۔