سعودی عرب:21 ارب ڈالرز کے 5 سالہ تعلیمی منصوبے کی منظوری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی فرمانروا شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز نے مملکت میں تعلیمی شعبے کی ترقی کے لیے اکیس ارب تینتیس کروڑ ڈالرز (اسّی ارب ریال) مالیت کے پانچ سالہ منصوبے کی منظوری دی ہے۔

سعودی عرب کی سرکاری خبررساں ایجنسی ایس پی اے کی اطلاع کے مطابق پانچ سالہ تعلیمی منصوبے کے لیے یہ رقم وزارت تعلیم کو سالانہ مہیا کی جانے والی گرانٹ کے علاوہ ہوگی۔شاہ عبداللہ نے اس پروگرام پر عمل درآمد کی نگرانی کے لیے ایک وزارتی کمیٹی کے قیام کی بھی منظوری دی ہے۔

سعودی وزیرتعلیم شہزادہ خالد الفیصل نے اپنی وزارت کی ویب سائٹ پر جاری کردہ ایک بیان میں بتایا ہے کہ ''منصوبے کے تحت ملک میں ڈیڑھ ہزار نرسریاں تعمیر کی جائیں گی ،قریباً پچیس ہزار اساتذہ کو تربیت دی جائے گی،تعلیمی مراکز قائم کیے جائیں گے اور اسکولوں کو تیزرفتار انٹرنیٹ کی سہولت مہیا کی جائے گی''۔

شہزادہ خالد نے تعلیمی شعبے کی ترقی کے لیے فراخدلانہ انداز میں رقوم مہیا کرنے پر شاہ عبداللہ کا شکریہ ادا کیا ہے اور کہا ہے کہ اس تاریخی منفرد منصوبے سے تعلیم کا شعبہ دن دگنی اور رات چوگنی ترقی کرے گا اور ہماری آنے والی نسلیں اس سے بھرپور فائدہ اٹھا سکیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں