لیبیا میں 25 جون کو پارلیمانی انتخابات کا اعلان

مفاہمتی کوششوں کے لیے طرابلس میں فرانس کا نیا ایلچی مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لیبیا کے حالیہ سیاسی بحران کے جلو میں جنرل نیشنل کانگریس [پارلیمنٹ] نے پچیس جون کو پارلیمانی انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔ پارلیمنٹ کی جانب سے یہ اعلان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب ملک افراتفری کا شکار ہے اور منتخب ایوان کی مدت میں دسمبر 2014ء تک توسیع کے سابقہ اعلان پرعوامی اور سیاسی حلقوں کی جانب سے سخت رد عمل سامنے آیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جمعرات کی شام نیشنل کانگریس کے نائب صدر صالح المخزوم نے طرابلس میں ایک نیوز کانفرنس کے دوران ایک بیان پڑھ کر سنایا جس میں انہوں نے پیش آئندہ ماہ [جون] کی پچیس تاریخ کو نئی پارلیمنٹ کے انتخابات کا اعلان کیا۔

انہوں نے کہا کہ نئے پارلیمانی انتخابات" تاریخی" ہوں گے جو ملک کو موجودہ سیاسی بحران سے نکالنے میں مددگار ثابت ہوں گے۔

قبل ازیں پارلیمنٹ کی جانب سے ملک کو بحران سے نکالنے اور نئے انتخابات کا شیڈول جاری کرنے کے لیے کانگریس کا فوری اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ موجودہ پارلیمنٹ کا ایک اہم اجلاس پرسوں اتوار کو بھی ہوگا جس میں ملک کو درپیش سیاسی اور سیکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے نئے اقدامات پرغور کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ لیبیا کی موجودہ پارلیمنٹ کی آئینی مدت رواں سال فروری میں ختم ہو گئی تھی لیکن سپریم اتھارٹی سمجھی جانے والی جنرل نیشنل کانگریس نے پارلیمنٹ کی مدت میں رواں سال کے آخرتک توسیع کا فیصلہ کیا تو ملک کی بیشتر سیاسی اور عسکری قیادت نے اس کے خلاف سخت احتجاج شروع کردیا تھا۔ حالیہ دنوں کے دوران یہ احتجاج مزید سیاسی افراتفری اور بدامنی کا باعث بھی بنا ہے۔

ادھر امریکی وزارت خارجہ نے لیبیا میں جون کے آخر میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کی کھل کرحمایت کی ہے اور کہا ہے کہ یہ انتخابات طرابلس کو بحران اور تشدد سے نکالنے میں مددگار ہوں گے۔

دورہ میکسیکو کے دوران امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے اپنے مصری، ترک اور فرانسیسی ہم منصبوں سے لیبیا کی تازہ صورت حال پر ٹیلیفون پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان کے مطابق ان کا ملک لیبیا میں جون میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کی حمایت کرتا ہے اورعالمی برادری پر زور دیتا ہے کہ وہ بھی لیبیا میں تبدیلی کے اس عمل میں بھرپور مدد کرے۔

درایں اثناء فرانسیسی وزیر خارجہ لوران فابیوس نے ڈونی گویر کو لیبیا میں پیرس کا خصوصی ایچلی مقرر کیا ہے۔ مسٹر گویر، طرابلس میں اقوام متحدہ، یورپی یونین اور عرب لیگ کے مندوبین سے مل کر لیبیا میں قیام امن، متحارب سیاسی اور عسکری گروپوں میں مفاہمت کے لیے کام کریں گے۔

فرانسیسی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں لیبیا میں حالیہ کشیدگی پر افسوس کا اظہار کیا گیا اور ساتھ ہی لیبیائی سیاسی قوتوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ایک مشترکہ سیاسی ایجنڈے پر متفق ہوں تاکہ تشدد کی لہر کا خاتمہ اور عبوری سیاسی عمل کو آگے بڑھایا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں