افغانستان: ہرات میں بھارتی قونصل خانے پر حملہ ناکام

ایک حملہ آور مارا گیا دو نے ہتھیار ڈال دیے: بھارتی ترجمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جمعہ کے روز علی الصبح افغانستان کی صوبہ ہرات میں قائم بھارتی قونصل خانے کو ایک مسلح کارروائی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ مسلح کارروائی تین بج کرپچیس منٹ پر اس وقت شروع ہوئی تین مسلح افراد نے قونصل خانے میں گھسنے کی کوشش کی جن میں سے ایک کو موقع پر ہلاک کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق قوصل خانے پر حملے کی یہ کارروائی کئی گھنٹے تک جاری رہی۔ مقامی پولیس کے مطابق تین مسلح افراد نے ایک قریبی مکان سے قونصل خانے پر فائرنگ شروع کی ۔

حملہ آور فائرنگ کے لیے مشین گنز، گرینیڈز اور راکٹ بھی استعمال کر رہے تھے۔ ان میں سے ایک نے اسی فائرنگ کا کور لیتے ہوئے قونصل خانے کی دیوار پھلانگنے کی کوشش کی تو اسے محافظین نے گولی مار کر ہلاک کر دیا۔ جبکہ دوسرے دو حملہ آوروں کو ایک سو پچاس محافظین نے گھیرے میں لے لیا۔

واضح رہے بھارتی دفتر خارجہ کے ترجمان سید اکبرالدین کے مطابق قونصل خانے کی حفاظت کیلیے بھارت کی تبتی سرحد کی محافظ فورس مامور ہے۔

بھارتی ترجمان کے مطابق ہرات قونصل خانے پر حملے کی کارروائی کو بھارت کی تبتی سرحد کی حفاظت کی ذمہ داری انجام دینے والی فورس اور افغان سپاہیوں نے کامیابی سے ناکام بنا دیا ہے۔ اس کارروائی کے دوران تمام بھارتی اہلکار محفوظ ہیں۔

بھارتی ترجمان کے مطابق افغان حکام بھارت کے اعلی حکام کے ساتھ اس بارے میں مسلسل رابطے میں ہیں۔ بھارتی سیکرٹری خارجہ اس معاملے کی خود مانیٹرنگ کر رہے ہیں۔

افغانستان میں مبصرین نے صوبہ ہرات میں قائم بھارتی قونصل خانے کو ٹارگیٹ بنائے جانے کو حیرت سے دیکھا ہے کہ ایرانی سرحد سے جڑے ہوئے اس شہر میں طالبان کے اثرات نہ ہونے کے برابر ہیں۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ یہ علاقہ افغانستان کی سکیورٹی اور بھارتی قونصل خانے کے لحاظ سے محفوظ ترین جگہ مانی جاتی ہے۔ نیز طالبان کی کارروائیوں کے معمول کے طریقے سے یہ ہٹا ہوا انداز بھی محسوس کیا گیا ہے کہ طالبان حملہ آوروں کے خود کو سرنڈر کرنے کے واقعات کم ہی سننے کو ملتے ہیں۔ لیکن اس واقعے میں ایسا کیے جانے کی اطلاع آئی ہے۔

واضح رہے افغانستان میں یہ واقعہ ایک ایسے مرحلے پر پیش آیا ہے جب نریندر مودی کے حلف کی تقریب میں شرکت کیلیے وزیر اعظم میاں نواز شریف کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے، تاہم ان کے بھارت خود جانے یا نہ جانے کا فیصلہ آج کیا جانا ہے۔ البتہ افغان صدر حامد کرزئی نے حلف برداری کی تقریب میں شرکت کا فیصلہ کر لیا ہے اور وہ بھارت جانے کی تیاری میں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں