پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف بھارت پہنچ گئے

نریندر مودی کی تقریب حلف وفاداری میں شرکت کریں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف اپنے نامزد بھارتی ہم منصب نریندر مودی کی تقریب حلف برداری میں شرکت کیلئے نئی دلی پہنچ گئے۔ دونوں ملکوں کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ پاکستان کے وزیر اعظم ہمسایہ ملک میں اپنے ہم منصب کی تقریب حلف برداری میں شریک ہو رہے ہیں۔ دو روزہ دورے کے دوران پاکستانی وفد کی بھارتی صدر اور وزیر اعظم سے الگ الگ ملاقاتیں بھی ہوں گی۔

وزیر اعظم نواز شریف کا خصوصی طیارہ بھارتی وقت کے مطابق گیارہ بج کر پانچ منٹ پر نئی دلی کے اندرا گاندھی انٹر نیشنل ائر پورٹ پر اترا۔ بی جے پی کے رہنماؤں، اعلی بھارتی فوجی حکام، پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط، اور ہائی کمیشن کے سینئر افسروں نے وزیر اعظم اور ان کے وفد کا استقبال کیا۔ اس موقع پر ایک بچی نے وزیر اعظم نواز شریف کو پھول پیش کئے۔

بھارت پہنچنے کے بعد انڈین چینل این ڈی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ انہیں ہندوستان کے نامزد وزیر اعظم نریندر مودی کے حوالے سے کوئی خدشات نہیں اور وہ مودی سرکار کے ساتھ برابری کی بنیاد پر تعلقات چاہتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان بد اعتمادی اور خوف کو ختم کرنا ہو گا۔

'پاکستان تمام ہمسایہ ممالک کےساتھ پرامن تعلقات چاہتا ہے، سب کو مل کر خطے میں امن کےلئےکام کرنا ہو گا'۔ انہوں نے انڈیا کےساتھ تمام تصفیہ طلب مسائل کے حل کرنے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ وہ بات چیت کاسلسلہ وہیں سے شروع کرنا چاہتے ہیں جہاں1999 میں اپنی سابق دور حکومت میں چھوڑا تھا۔

پاکستانی وفد پیر کو شام چھ بجے نریندر مودی کی حلف برداری تقریب میں شرکت کیلئے راشٹر پتی بھون پہنچے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں