ترک عدالت کا اسرائیلی کمانڈروں کی گرفتاری کا حکم

ترک حکام کو اسرائیلی کمانڈروں کے بین الاقوامی وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کی ایک عدالت نے اسرائیلی فوج کے چار سابق کمانڈروں کی گرفتاری کا حکم دیا ہے۔ان کے خلاف 2010ء میں ترکی کے غزہ جانے والے امدادی بحری جہاز فریڈم فلوٹیلا پر حملے کے الزام میں ان کی عدم موجودگی میں مقدمہ چلایا جارہا ہے۔اس حملے میں نو ترک رضا کار جاں بحق ہوگئے تھے۔

ترکی کی سرکاری خبررساں ایجنسی اناطولو نے اطلاع دی ہے کہ استنبول کی عدالت نے حکام کو اسرائیلی فوج کے سابق سربراہ لیفٹیننٹ جنرل گابی اشکنزئی اور تین دوسرے سابق کمانڈروں کی گرفتاری کے لیے بین الاقوامی وارنٹ جاری کرنے کا حکم دیا ہے۔

ترک عدالت کی جانب سے یہ فیصلہ ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب ترکی اور اسرائیل کے درمیان گذشتہ چار سال سے جاری سفارتی کشیدگی کے خاتمے کے لیے ایک مصالحتی معاہدے کو حتمی شکل دی جارہی ہے۔

اسرائیل نے ترکی کے ساتھ محاذ آرائی کو ختم کرنے کے لیے مارچ میں خیرسگالی کے طور پر غزہ کی پٹی میں ترک اسپتال کی تعمیر کے لیے عمارتی سامان لے جانے کی اجازت دے دی تھی۔واضح رہے کہ دونوں ممالک کے درمیان فریڈم فلوٹیلا پر اسرائیلی کمانڈوز کے حملے کے بعد سے سفارتی اور سیاسی تعلقات منقطع ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں