امریکی شہری لیبیا سے فورا نکل آئیں: دفتر خارجہ

"لیبیا میں غیر ملکیوں کو اغوا سمیت جان لیوا حملوں کا خطرہ ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی دفتر خارجہ نے کشیدہ صورت حال کے پیش نظر لیبیا میں موجود امریکی شہریوں کو فوری طورپر لیبیا چھوڑ دینے کی ہدایت کی ہے۔ امریکی دفتر خارجہ نے یہ ہدایت اپنے میرینز سمیت بحری بیڑے کے لیبیا روانہ ہونے کے بعد جاری کی ہے۔

امریکا نے طرابلس کے سفارت خانے میں سفارتی عملے کی تعداد بھی غیر معمولی حد تک کم کرنے کا کہہ دیا ہے۔ ہدایت کے مطابق سفارت خانے میں صرف ہنگامی خدمات کیلیے عملہ موجود رہے گا۔

دفتر خارجہ کی طرف سے لیبیا کیلیے جاری کی گئی ٹریول وارننگ میں کہا گیا ہے کہ '' خدشہ ہے کہ لیبیا میں غیر ملکیوں اور خاص طور پر امریکی شہریوں کو خواہ وہ امریکی سرکاری عملے کا حصہ ہوں یا ان کا این جی اوز سے تعلق ہو اغوابھی کیا جاسکتا ہے اور پرتشدد و جان لیوا حملوں کا نشانہ بھی بنایا جا سکتا ہے۔ ''

جاری کردی ٹریول وارننگ کے مطابق لیبیا میں موجود شہریوں سے کہا گیا ہے کہ وہ لیبیا میں رہتے ہوئے خبردار رہیں اور جلد سے جلد لیبیا سے نکل آئیں۔

واضح رہے ایک روز قبل امریکا کے ایک دفاعی ذمہ دار نے بتایا تھا کہ امریکا نے ایک ہزار میرینز کے ہمراہ بحری بیڑہ لیبیا کے ساحل کی طرف روانہ کر دیا ہے ۔

اس سے پہلے لیبیا کی بگڑتی ہوئی صورت حال کے پیش نظر امریکا نے اپنے میرینز کو اٹلی روانہ کیا تھا۔ امریکا نے اپنے ان اقدامات کو حفظ ما تقدم کے طور پر کیا گیا قرار دیا ہے۔

لیبیا جہاں معمر قذافی کے اقتدار کے خاتمہ کے بعد مسلسل عسکری گروپوں کی باہمی لڑائیاں جاری ہیں اور بد امنی روکنے میں نہیں آ رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں