.

لندن میں اسلامی علاقہ؟ پولیس نے تحقیقات شروع کردی

نسل پرست انگلش ڈیفنس لیگ پر پارک میں نشان لگانے کا شُبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی پولیس نے لندن کے ایک پارک کو اسلامی علاقہ قرار دیے جانے کی تحقیقات شروع کردی ہے۔

لندن کے بارٹلیٹ پارک میں ایک کاغذ پر یہ انتباہ لکھ کر لگایا گیا ہے کہ ''یہاں کتوں کو لے کر نہ آئیں کیونکہ مسلمان کتوں کو پسند نہیں کرتے ہیں۔یہ اب ایک اسلامی علاقہ ہے''۔

برطانوی پارلیمان کے لندن کے اس علاقے سے تعلق رکھںے والے رکن جیم فٹزپیٹرک نے اس نشان کے بارے میں پولیس کو آگاہ کیا تھا۔ایک برطانوی روزنامے ایوننگ اسٹینڈرڈ ڈیلی میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق پارک میں کتے کو لے کر سیر کے لیے آنے والے ایک شہری کی سب سے پہلے اس انتباہی نشان پر نظر پڑی تھی۔

تاہم رکن پارلیمان نے اس رائے کا اظہار کیا ہے کہ کاغذ پر پرنٹ یہ نشان ممکنہ طور پر دائیں بازو کے سخت گیر گروپ انگلش ڈیفنس لیگ (ای ڈی ایل) کی کارستانی ہوسکتا ہے۔فٹزپیٹرک نے مذکورہ اخبار کو بتایا :''سوال یہ ہے کہ یہ یا تو ای ڈی ایل نے اشتعال انگیزی پھیلانے کے لیے لگایا ہوگا یا پھر نسل پرست پُرجوش مذہبیوں کا یہ کام ہوسکتا ہے''۔

انھوں نے کہا کہ ''یہ عدم رواداری کا ایک اور چہرہ ہے۔ اس بات کی کوئی ضمانت نہیں ہے کہ یہ کام اسلام پسندوں نے کیا ہوگا کیونکہ یہ وہ لوگ ہوسکتے ہیں جو معاشرے میں انتشار پھیلانے کی کوشش کررہے ہیں اور ہمیں تقسیم کرنا چاہتے ہیں''۔پارک میں نصب یہ نشان مٹا دیا گیا ہے اور پولیس علاقے میں اضافی گشت کررہی ہے۔