.

ویانا مذاکرات سے قبل امریکی ۔ ایرانی وفود کی ملاقات

شام اور لبنان کے مسائل بات چیت کا اہم موضوع ہوں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران اور چھ بڑی طاقتوں کے درمیان ویانا میں نو اور دس جون کو ہونے والے مذاکرات سے قبل امریکا اور ایران کے وفود بھی اہم ملاقات کریں گے۔ دونوں ملکوں کے وفود کی میٹنگ میں علاقائی صورت حال بالخصوص شام اور لبنان کی صورت حال پر غور کیا جائے گا۔

امریکی وزارت خارجہ کے ایک بیان میں میڈیا میں آنے والی اس خبر کی تصدیق کی گئی ہے کہ ویانا مذاکرات سے قبل تہران اور واشنگٹن کے وفود براہ راست ملاقات کریں گے۔

بیان کے مطابق امریکی وفد کی قیادت نائب وزیر خارجہ بیل پیرینز کریں گے۔ ان کے علاوہ وفد میں امریکی سیکرٹری خارجہ وینڈی شیرمن بھی شامل ہوں گے جو ایران کے جوہری تنازع پر بات چیت کے لیے اب تک اعلیٰ مذاکرات کار کے طور پر خدمات انجام دیتے چلے آ رہے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایران کے ساتھ بات چیت کے حوالے سے بیل پیرنز اور وینڈی شیرمین دونوں نہایت اہمیت کے حامل عہدیدار سمجھے جاتے ہیں۔ گذشتہ برس 24 نومبر کو ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان تہران کے متنازعہ جوہری پروگرام پر ابتدائی ڈیل میں ان دونوں کا کلیدی کردار سمجھا جاتا رہا ہے۔

امریکی وفد سے ملاقات کے بعد ایرانی حکام روسی قیادت سے بھی ملاقات کریں گے۔ اس کے بعد چھ بڑی طاقتوں اور ایران کے مابین جوہری تنازع پر براہ راست مذاکرات شروع ہوں گے۔ پچھلے آٹھ ماہ سے جاری مذاکرات میں دونوں فریق ایک دوسرے پر بعض غیر ضروری مطالبات پیش کرنے اور معاہدے کی شرائط کی خلاف ورزیوں کے الزامات بھی عائد کرتے چلے آئے ہیں۔

مذاکرات کا یہ دور فریقین کے لیے نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ اس دوران ایران یورینیم کی افزودگی محدود کرنے پر تیار ہوا تو تہران پر عائد عالمی اقتصادی پابندیوں میں مزید نرمی کی جائے گی۔