.

محبت کے مارے اطالوی کے ہاتھوں بیوی بچوں کا قتل

تہرے قتل کے بعد فٹبال میچ دیکھنے مقامی بار میں چلا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک اطالوی شہری نے اپنی اہلیہ اور دو بچوں کے قتل کا اعتراف کر لیا ہے۔ اس سنگ دل اطالوی نے یہ واردات مبینہ طور پر قریبی ٹاون کی بار میں جانے سے پہلے کی تاکہ برطانیہ اور اٹلی کے درمیان فٹ بال میچ کو جائے واردات پر عدم موجودگی کے لیے استعمال کر سکے۔

تہرے قتل کی اس واردات کا نشانہ بننے والی 38 سالہ کرسٹینا اومس، پانچ سالہ بچی اور بیس ماہ کے بچے کی لاشیں گلے کٹنے کے بعد لت پت گھر میں پڑی تھیں۔

اپنے دوست کے ساتھ فٹ بال میچ دیکھنے بعد 31 سالہ کارلو لیسی نصف شب کے وقت گھر واپس آیا اور اس نے لاشیں دیکھنے کے بعد پولیس کو بلایا۔

دوران تفتیش اس نے پولیس کو بتایا اپنے اہل خانہ کو قتل کرنے کے بعد چاقو ایک قریبی گٹر میں پھینک کر اپنے دوست کی طرف چلا گیا۔

قتل کی وجہ بتاتے ہوئے اس نے کہا وہ اپنے ساتھ کام کرنے والی ایک لڑکی کی محبت میں گرفتار ہو چکا تھا۔ اس لیے اس نے اپنی بیوی اور بچوں کو راستے سے ہٹا دیا۔