.

مشعل لیرائیڈن اے ایف پی کی پہلی خاتون نیوز ڈائریکٹر مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی خبررساں ادارے ''ایجنسی فرانس پریس'' (اے ایف پی) نے پہلی مرتبہ ایک خاتون کو اپنی نیوز ڈائریکٹر مقرر کیا ہے۔

اے ایف پی کے موجودہ نیوز ڈائریکٹر فلپ میسونیٹ ذاتی وجوہ کی بنا پر مستعفی ہوگئے ہیں اور ان کی جگہ ادارے نے مشعل لیرائیڈن کا تقرر کیا ہے۔وہ یکم اگست کو اپنی نئی ذمے داریاں سنبھالیں گی۔

مس مشعل 1981ء سے اس نیوز ایجنسی سے وابستہ ہیں اور وہ 2009ء سے اطالوی دارالحکومت روم میں اس کی بیورو چیف چلی آرہی ہیں۔ان کے پیش رو میسونیٹ 2009ء سے نیوز ڈائریکٹر چلے آرہے تھے۔

اے ایف پی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر عمانوایل ہوج نے مسٹر میسونیٹ کو ان کی پیشہ ورانہ لگن اور جدت پسندی پر خراج تحسین پیش کیا ہے۔انھوں نے مس مشعل لیرائیڈن کو ایک زبردست نیوز پروفیشنل قراردیا ہے اور کہا ہے کہ وہ ایجنسی کی ویڈیو سروس ،اسپورٹس اور کلچرل کوریج کو مضبوط بنانے سمیت مختلف منصوبوں پر کام کریں گی۔

وہ اس سے قبل اے ایف پی کے پیرس میں واقع ہیڈکوارٹرز میں مختلف سینیر عہدوں پر ذمے داریاں انجام دے چکی ہیں۔وہ ابیدجان میں اے ایف پی کی ڈپٹی بیورو چیف ،یورپ اور افریقہ کے لیے ڈپٹی ایڈیٹر انچیف ،سماجی امور سروس کی سربراہ اور 2006ء سے 2009ء تک مینجنگ ایڈیٹر رہ چکی ہیں۔

واضح رہے کہ اے ایف پی دنیا کے چند بڑے خبررساں اداروں میں سے ایک ہے۔وہ بین الاقوامی خبروں کے مواد کے علاوہ فوٹو ،ویڈیو ،ملٹی میڈیا اور گرافکس بھی مہیا کرتی ہے۔دنیا کے ایک سو پچاس ممالک میں اس کے بیورو دفاتر ہیں اور دو ہزار دوسو ساٹھ نفوس پر مشتمل اس کا عملہ دنیا کی چھے بڑی زبانوں میں اپنی نیوز سروس مہیا کرتا ہے۔