.

'آق' پارٹی صدارتی امیدوار کا اعلان یکم جولائی کو کرے گی

ترک اپوزیشن نے اکمل الدین اوگلو کو صدارتی امیدوار نامزد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کی اسلام پسند حکمراں جماعت جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ [آق] کے سربراہ اور وزیر اعظم رجب طیب ایردوآن نے کہا ہے کہ ان کی جماعت پیش آئند صدارتی انتخابات میں بھرپور طریقے سے حصہ لے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ 10 سے 24 اگست 2014ء کے دوران ہونے والے صدارتی انتخابات کے لیے ان کی جماعت صدارتی امیدوار کا اعلان یکم جولائی کو کرے گی۔

غالب امکان یہ ہے کہ وزیر اعظم ایردوآن ہی پیش آئند صدارتی انتخابات میں "آق" پارٹی کے امیدوار ہوں گے اور پارٹی انہیں سپورٹ کرے گی۔ تاہم اگر وہ خود صدارتی انتخاب میں شرکت سے معذرت کرتے ہوئے کسی اور کو اس کا موقع دیتے ہیں تو یہ "سرپرائز" سمجھا جائے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق وزیر اعظم نے انصاف وترقی پارٹی کے پارلیمانی گروپ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ "ہم صدارتی امیدوار کے چناؤ کے لیے صلاح مشورہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔ مشاورت کا عمل آخری مراحل میں ہے۔ یکم جون کو صدارتی امیدوار کا اعلان ہو جائے گا"۔

انہوں نے کہا کہ صدارتی امیدوار کے سامنے آنے کے بعد ہی ہم عوام سے رجوع کریں گے تاہم انہوں نے اپنی گفتگو میں اس بات کا کوئی اشارہ نہیں دیا کہ وہ خود ہی صدارتی امیدوارہوں گے یا نہیں؟

خیال رہے کہ ترکی میں اپوزیشن کی دو بڑی جماعتوں نے اسلامی تعاون تنظیم "او آئی سی" کے سابق سیکرٹری جنرل پروفیسر اکمل الدین احسان اوگلو کو اپنا مشترکہ صدارتی امیدوار نامزد کیا ہے۔

ترکی کی حکمراں جماعت "آق" پر یہ الزام بھی عائد کیا جا رہا ہے کہ وہ ملک کے تمام کلیدی عہدوں اور فیصلہ ساز اداروں کو اپنی گرفت میں رکھنا چاہتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ وزیر اعظم رجب طیب ایردوان خود ہی صدارتی انتخابات میں حصہ لینا چاہتے ہیں۔ اگر وہ صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کا فیصلہ کریں گے تو انہیں وزارت عظمیٰ کا منصب چھوڑنا پڑے گا۔

یاد رہے کہ پارٹی کا قانون بھی کسی عہدیدار کو تین سے زائد مرتبہ کسی عہدے پر فائز رہنے کی اجازت نہیں دیتا ہے۔ ایردوآن تین بار وزیر اعظم منتخب ہو چکے ہیں۔ اس لیے اب ان کے پاس مزید آپشن نہیں بچا ہے۔

ترکی میں اندرون ملک اور بیرون ملک حکمران جماعت پر تنقید اور استبدادی سیاست کے الزامات کے علی الرغم طیب ایردوآن عوام میں اب بھی مقبول ہیں۔ اگر وہ صدارتی انتخابات کے لیے میدان میں اترتے ہیں تو ان کی کامیابی کے زیادہ امکانات ہیں۔