عراق میں یرغمال بھارتی نرسیں رہا، وطن واپسی

جنگجو گروپ نے تکریت سے موصل منتقل کرنے کے بعد نرسوں کو رہا کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عراق میں وزیراعظم نوری المالکی کی حکومت کے خلاف برسرپیکار جنگجوؤں نے یرغمال بنائی گئی چھیالیس بھارتی نرسوں کو رہا کردیا ہے اورانھیں ان کے وطن واپس بھیجنے کے لیے شمالی شہر اربیل کی جانب روانہ کردیا ہے۔

نئی دہلی میں بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان سید اکبرالدین نے ایک بیان میں اس خبر کی تصدیق کی ہے اور بتایا ہے کہ ''جن بھارتی نرسوں کو گذشتہ روز ان کی مرضی کے بغیر کہیں منتقل کیا گیا تھا ،انھیں جمعہ کو رہا کردیا گیا ہے''۔

اطلاعات کے مطابق جمعرات کو جہادی عراق کے شمالی شہر تکریت سے ان نرسوں کو دو بسوں میں سوار کرکے لے گئے تھے اور انھیں آج دوسرے بڑے شہر موصل میں رہا کردیا ہے۔وہاں سے انھیں کردستان کے علاقائی دارالحکومت اربیل منتقل کیا گیا ہے جہاں سے انھیں ایک خصوصی طیارے کے ذریعے واپس بھارت لے جایا جائے گا۔

یہ تمام نرسیں بھارت کی جنوبی ریاست کیرالہ سے تعلق رکھتی ہیں۔اس ریاست کے وزیراعلیٰ اومن چاندی نے کہا ہے کہ ''حکومتِ ہند نے ایک خصوصی طیارہ عراق بھیجنے سے اتفاق کیا ہے اور یہ کل صبح نرسوں کو لے کر واپس کوچی پہنچ جائے گا۔انھوں نے نرسوں کی رہائی اور ان کی وطن واپسی کے لیے طیارہ بھیجنے پر بھارت کی مرکزی حکومت کا شکریہ ادا کیا ہے۔

یرغمالی نرسوں میں سے ایک سیونا تھامس نے آج صبح فون پر اپنے والد سے گفتگو کی تھی اور بتایا تھا کہ انھیں اغوا کاروں نے رہا کرنے سے اتفاق کیا ہے۔ایک اور نرس کے والد شروتی ایس نیّر نے اپنی بیٹی کے حوالے سے بتایا کہ'' جنگجو ان کے ساتھ اچھا سلوک کررہے ہیں اور انھیں بسکٹ اور پانی دے رہے ہیں لیکن ہم ان کے تحفظ کے حوالے سے تناؤ کا شکار ہیں اور ان کے لیے دعاگو ہیں''۔

بھارتی نرسیں سابق عراقی صدر صدام حسین کے آبائی شہر تکریت میں ایک سرکاری اسپتال میں ملازمت کررہی تھیں۔اس شہر پر گذشتہ ماہ دولت اسلامی کے جنگجوؤں نے قبضہ کرلیا تھا۔ان نرسوں نے قبل ازیں بھارتی میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ سرکاری فوج اور جنگجوؤں کے درمیان لڑائی میں زخمی ہوکر آنے والے افراد کا علاج کررہی تھیں۔

دوہفتے قبل عراق کے دوسرے بڑے شہر موصل میں کام کرنے والے چالیس بھارتی تعمیراتی ورکروں کو اغوا کر لیا گیا تھا۔ان بھارتیوں کے اغوا پر وزیراعظم نریندر مودی کی حکومت کو تنقید کا سامنا ہے اور وہ ابھی تک ان بھارتیوں کو رہائی نہیں دلا سکی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں