.

سعودی عرب میں ایرانی سفیر کی تبدیلی

جواد رسولی محلاتی کی جگہ حسین صادقی کی تقرری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران نے سعودی عرب میں اپنا سفیر تبدیل کرتے ہوئے محمد جواد رسولی محلاتی کی جگہ حسین صادقی کو نیا سفیر مقرر کیا ہے۔

ایران کی سرکاری خبر رساں ایجنسی"ایرنا" کے مطابق وزارت خارجہ کی ترجمان مرضہ افحم نے بدھ کو ہفتہ وار میڈیا بریفنگ میں ریاض میں تہران کے نئے سفیر کی تعیناتی کا اعلان کیا۔

خیال رہے کہ حسین صادقی اس سے قبل بھی سعودی عرب میں ایران کے سفیر رہ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ کویت اور متحدہ عرب امارات میں بھی ایرانی سفیر کی خدمات انجام دیتے رہے ہیں۔ بطور سفیر تقرری سے قبل انہیں تین مرتبہ وزارت خارجہ میں خلیجی امور کے انچارج کے طور پر تعینات کیا جاتا رہا ہے۔ وہ ایرانی وزارت خارجہ میں مشیر کے طور پر بھی خدمات انجام دے چکے ہیں۔

خیال رہے کہ حسین صادقی سعودی عرب اور ایران کے درمیان تعلقات کی بہتری کے حوالے سے مثبت سوچ رکھتے ہیں۔ رواں سال کے آغاز میں انہوں نے گارڈین کونسل کے چیئرمین اور سابق صدرعلی اکبر ہاشمی رفسنجانی سے بھی ملاقات کی تھی۔ اس ملاقات میں انہوں نے تہران اور ریاض کے مابین دو طرفہ تعاون کو وسعت دینے پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

ملاقات کے دوران سابق صدر کا کہنا تھا کہ خطے کو درپیش مسائل کے تناظر میں ایران اور سعودی عرب کے درمیان دوطرفہ تعاون کا استحکام وقت کی ضرورت ہے۔ انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان سیاسی اور اقتصادی شعبے میں تعاون بڑھانے کا بھی مطالبہ کیا۔

ایران میں گذشتہ برس منتخب ہونے والےاصلاح پسند صدر حسن روحانی نے سعودی عرب کے حوالے سے نسبتا لچک کا مظاہرہ کیا ہے۔ وہ متعدد مرتبہ سعودی عرب سمیت تمام خلیجی ملکوں کے ساتھ تعاون بڑھانے کی ضرورت پر زور دیتے رہے ہیں۔

صدر روحانی نے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کو مستحکم کرنے کیلیے گارڈین کونسل کے سربراہ علی اکبر ہاشمی رفسنجانی کو سعودی عرب روانہ کرنے کا اعلان کیا ہے تاہم ابھی تک ان کے دورے کی تاریخ مقرر نہیں کی گئی۔