مصری فوج کا 14 عسکریت پسند ہلاک کرنے کا دعوی

مشتبہ جنگجووں کو سیناء کے شورش زدہ علاقے میں ہلاک کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصری فوج نے شورش زدہ صحرائے سیناء کے علاقے میں 14 جہادیوں کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا ہے۔

یہ بات اتوار کے روز مصری فوج کے ایک اعلان میں بتائی گئی۔ سیناء کا علاقہ معزول مصری صدر ڈاکٹر محمد مرسی کے اقتدار ختم ہونے کے بعد سے باغیانہ سرگرمیوں کا گڑھ بنا ہوا ہے۔

سرکاری خبر رساں ادارے مڈل ایسٹ نیوز ایجنسی 'مینا' کے مطابق شمالی سیناء میں شیخ زوید کے علاقے میں ہفتے کے روز ہونے والے تصادم میں 47 افراد کو گرفتار کیا گیا۔

درایں اثناء عسکریت پسندوں کے گڑھ الجورہ میں ایک مکان پر مارٹر گولا کرنے سے چار بچے ہلاک ہو گئے۔ سنہ 2013 میں صدر مرسی کی حکومت خاتمے کے بعد علاقے میں عسکری کارروائیوں کے اندر تیزی دیکھنے میں آئی ہے۔

عسکریت پسند اپنے حملوں میں زیادہ تر سیکیورٹی اہلکاروں کو نشانہ بناتے ہیں تاہم ان حملوں میں عام شہریوں کی ہلاکت بھی رونما ہونے کی اطلاعات موصول ہوتی رہتی ہیں۔

مصری فوج نے عسکریت پسندوں کی بیخ کنی کے لئے جزیرے میں بکتر بند گاڑیاں اور فوجی کمک بڑی تعداد میں ارسال کی ہے۔ ان عسکریت پسندوں نے قاہرہ سمیت ملک کے دوسرے شہروں کو اپنے کار بم حملوں کا نشانہ بنایا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں