ترکی :ٹینکر حادثے میں مرنے والوں کی تعداد 26 ہوگئی

ترک حکام نے ایک ہفتے تک الم ناک حادثے کی تفصیل کو پردۂ اخفا میں رکھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکی کے جنوبی مشرقی علاقے میں مائع پیٹڑولیم گیس (ایل پی جی) سے لدے ٹینکر کے خوفناک حادثے کے نتیجے میں مرنے والوں کی تعداد چھبیس ہوگئی ہے۔

ترکی کے جنوب مشرقی شہر دیاربکیر کے نزدیک 22 جولائی کو مائَع پیٹرولیم گیس سے لدا ہوا ٹینکر ایک ہائی وے پر الٹ گیا تھا اور پھر دھماکے سے پھٹ گیا تھا۔اس الم ناک واقعے میں ایک شخص موقع پر ہی دم توڑ گیا تھا لیکن اب اس حادثے میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر چھبیس ہوگئی ہے۔

ترکی کے ٹیلی ویژن چینل این ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق زورداردھماکے کے نتیجے میں دو مسافر کاروں اور متعدد گاڑیوں کو آگ لگ گئی تھی۔یہ گاڑیاں اس وقت ہائی وے پر سفر کررہی تھیں اور وہ آگ کی زد میں آگئی تھیں۔اس حادثے میں خواتین اور بچوں سمیت کل ستر افراد زخمی ہوئے تھے۔ان میں زیادہ تر کے چہرے اور جسم جھلس گئے تھے۔

حادثے کے زخمیوں کو استنبول ،ازمیر اور عدنہ کے اسپتالوں میں منتقل کیا گیا تھا اور ان میں سے چھے جمعرات کو دم توڑ گئے ہیں۔ٹی وی کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے کیونکہ اس وقت بھی چالیس شدید زخمی اسپتالوں میں زیر علاج ہیں اور ان میں بعض کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔

فوری طور پر یہ واضح نہیں ہوا کہ اس الم ناک حادثے میں ہونے والی ہلاکتوں کو ایک ہفتے تک پردۂ اخفا میں کیوں رکھا گیا ہے اور اب اس کی تفصیل منظرعام پر لائی گئی ہے۔اس کی ایک وجہ شاید عید الفطر ہوسکتی ہے اور حکام نے عوام کی خوشیاں کو اس تباہ کن حادثے کی نذر ہونے سے بچانے کے لیے قبل ازیں اس کی تفصیل ظاہر نہیں کی ہے۔

اس حادثے کے شدید زخمیوں کی ملک کے مغرب میں واقع شہروں میں منتقلی سے اس حقیقت بھی پتا چل گیا ہے کہ جنوب مشرق میں کرد اکثریتی آبادی والے علاقوں میں سرکاری اسپتالوں میں جھلس جانے والے مریضوں کے علاج معالجے کا کوئی انتظام نہیں تھا۔اسی لیے انھیں استنبول اور دوسرے شہروں میں بھیج دیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں