لیبیا کی سرحد پر فائرنگ دو مصری ہلاک

تیونس کا لیبیا کے ساتھ جڑی سرحد بند کرنے کا اشارہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لیبیا اور تیونس کی سرحد پر سرحدی محافظین کی فائرنگ کے نتیجے میں دو مصری شہری ہلاک ہو گئے ہیں۔ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب سینکڑوں مصری شہری لیبیا میں افراتفری کے باعث تیونس میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے تھے کہ لیبیا کے سرحدی محافظن نے فائر کھول دیا۔

واضح رہے پچھلے دو ہفتوں کے دوران لیبیا میں شدت اختیار کرنے والی خانہ جنگی کے باعث مقامی اور غیر ملکیوں کی بڑی تعداد نقل مکانی پر مجبور ہے۔ خانہ جنگی اور قبضے کے سلسلے میں یہ لڑائی طرابلس کے ائیر پورٹ اور بنغازی میں جاری ہے۔

2011 کے بعد طرابلس کا ائیرپورٹ سخت ترین دہشت گردی کا نشانہ بنا ہے۔ اب تک اس کا بیشتر حصہ تباہ ہو چکا ہے جبکہ متحارب فریق اس کا قبضہ لینے کے لیے لڑ رہے ہیں۔

اس صورتحال میں غیر ملکی سفارتکار بھی طرابلس چھوڑ کر بھاگ رہے ہیں۔ تیونسی سرکاری ذرائع نے دو مصری افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے تاہم ابھی تک لیبیا کے حکام نے اس واقعے کی تصدیق یا تردید نہیں کی ہے۔

تیونس لیبیا کی خراب صورتحال کے پہلے نظر پہلے ہی لیبیا کے ساتھ اپنی سرحد بند کرنے کا عندیہ دے چکا ہے۔ تاکہ پناہ گزینوں کے علاوہ کسی ممکنہ شرپسند گروہ کے اپنے ہاں آنے کے امکان کو روک سکے۔

تیونسی وزیر خارجہ محمد حامدی کے مطابق اس وقت یومیہ بنیادوں پر پانچ سے چھ ہزار لوگ تیونس میں داخل ہو رہے ہیں تاہم صورتحال فی الحال تیونس کے کنترول سے باہر نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں