عمرہ: سعودی معیشت کو 1 ارب 60 کروڑ ڈالرز کی آمدن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حالیہ عمرہ سیزن کے دوران سعودی عرب کی معیشت کو ایک ارب ساٹھ کروڑ ڈالرز کی آمدن ہوئی ہے۔

مکہ مکرمہ کے ایوان صنعت وتجارت کی ٹرانسپورٹیشن کمیٹی کے سربراہ سعد القریشی نے بتایا ہے کہ عمرہ کے لیے آنے والے زائرین نے اوسطاً فی کس دوسو ستر ڈالرز صرف کیے ہیں۔اس طرح زائرین عمرہ کی رہائش ،ٹرانسپورٹ اور انھیں خوراک کی فراہمی کی مد میں سعودی معیشت میں ایک ارب ساٹھ ڈالرز کا اضافہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ اس مرتبہ عمرہ کا سیزن گذشتہ سال کے مقابلے میں بہت اچھا رہا ہے اور شکایات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔ان کے بہ قول مکہ مکرمہ کے وسطی علاقے میں پنج ستارہ ہوٹل عمرہ زائرین سے سو فی صد پُر رہے ہیں جبکہ وسطی علاقے کے نواح میں ہوٹلوں میں رہائش کی شرح ساٹھ فی صد رہی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اب عمرہ کمپنیاں بہت تجربے کار ہوچکی ہیں۔وہ اپنے نقصانات کے ازالے کا بندوبست کرسکتی ہیں اور درپیش رکاوٹوں کو بھی دور کرسکتی ہیں۔

واضح رہے کہ سعودی وزارت حج نے گذشتہ روز عمرہ کے لیے آنے والے تمام زائرین کو ہدایت کی ہے کہ وہ 11 اگست تک اپنے اپنے آبائی ممالک کو واپس چلے جائیں۔وزارت کی اس ہدایت سے قبل ہی رمضان المبارک کے دوران عمرہ کے لیے آنے والے اسّی فی صد زائرین مکہ مکرمہ سے واپس جاچکے ہیں اور باقی رہ جانے والے زائرین اپنے شیڈول کے مطابق واپسی کے لیے رخت سفر باندھ رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں