.

ترکی میں مبینہ 'سازشی' پولیس حکام کی گرفتاریاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی میں حکومت کے خلاف سازش کے الزام میں پولیس کی مالیاتی یونٹ کے سابق سربراہ سمیت درجنوں پولیس افسران کو حراست میں لے لیا ہے۔

ترک میڈیا کے مطابق حکومتی اداروں نے 33 پولیس افسران کو حکومت گرانے کی سازش میں ملوث قرار دے کر ان کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کئے تھے۔ اس موقع پر پولیس فورس نے اس اقدام پر کوئی ردعمل نہیں دیا۔

ترک حکام نے ماہ جولائی سے درجنوں پولیس افسران کو حکومت کے خلاف سازش کرنے کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔ ان گرفتار شدگان پر الزام ہے کہ انہوں نے ایک جرائم پیشہ تنظیم قائم کی اور ٹیلی فون ٹیپ کئے ہیں۔

حالیہ گرفتاریاں رجب طیب ایردوآن کی ترکی کے پہلے براہ راست منتخب صدر کے طور پر کامیابی اور احمد دائود اوگلو کی جانب سے بطور وزیر اعظم حلف اٹھانے کے بعد ہوئی ہیں۔

ایردوآن نے امریکا میں مقیم مفتی فتح اللہ گولن پر الزام لگایا ہے کہ وہ پولیس، عدلیہ اور دوسرے اداروں میں موجود اپنے پیروکاروں کے نیٹ ورک کو استعمال کرتے ہوئے ان کو اقتدار سے نکالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ گولن نے ان تمام الزامات کی تردید کی ہے۔