.

برصغیر پاک وہند میں القاعدہ کی نئی شاخ کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

القاعدہ کے سربراہ ڈاکٹر ایمن الظواہری نے بدھ کو جاری کردہ ایک ویڈیو بیان میں برصغیر پاک وہند کے لیے اپنی تنظیم کی ایک نئی شاخ کے قیام کا اعلان کیا ہے۔

جہادی اور دہشت گرد گروپوں کی آن لائن مانیٹرنگ کرنے والے امریکا میں قائم گروپ ''سائٹ'' کے مطابق جہادی فورمز پر پوسٹ کی گئی ایک ویڈیو میں ڈاکٹر ایمن الظواہری نے کہا ہے کہ ان کی نئی جنگجو تنظیم برما (میانمر) ،بنگلہ دیش اور بھارت کے کچھ حصوں میں مسلم خلافت کے قیام کے لیے کام کرے گی۔

واضح رہے کہ پاکستان اور جنوبی ایشیا کے ان ممالک کے لیے پہلے برصغیر پاک وہند کی اصطلاح استعمال کی جاتی رہی ہے لیکن اب یہ قریب قریب متروک ہوچکی ہے اور اس کے بجائے جنوبی ایشیا ہی کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔

ڈاکٹر ایمن الظواہری نے ایسے وقت میں القاعدہ کی اس نئی شاخ کا اعلان کیا ہے جب القاعدہ سے ہی ماضی میں وابستہ ایک سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامی نے عراق وشام میں اپنے زیر قبضہ علاقوں میں خلافت کے نام سے اپنی حکومت قائم کررکھی ہے اور وہ اپنے مخالفین کو سنگین سزائیں دے کر موت سے ہم کنار کررہے ہیں جس پر انسانی حقوق کی تنظیموں اور عالمی اداروں کی جانب سے سخت تشویش کا اظہار کیا جارہا ہے۔