.

کابل میں خودکش بم دھماکا،2 امریکی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں امریکی سفارت خانے کے نزدیک طالبان کے خودکش بم حملے کے نتیجے میں دو امریکیوں سمیت متعدد افراد ہلاک اور تیرہ زخمی ہوگئے ہیں۔

ایک امریکی عہدے دار نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر امریکیوں کی ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے لیکن یہ واضح نہیں کیا کہ آیا وہ فوجی ہیں یا عام شہری ہیں۔قبل ازیں نیٹو کے تحت ایساف فوج نے ایک بیان میں بتایا تھا کہ خودکش حملے میں تین اہلکار ہلاک ہوئے ہیں۔پولینڈ کی فوج کا کہنا تھا کہ ان میں ایک پولش فوجی ہے۔

طالبان بمبار نے منگل کی صبح کومصروف اوقات کے دوران امریکی سفارت خانے کے نزدیک واقع شاہراہ پر حملہ کیا تھا۔اس شاہراہ کو نیٹو کے فوجی قافلے ہر روز اپنی آمد ورفت کے لیے استعمال کرتے ہیں۔

واضح رہے کہ اس وقت افغانستان میں اکتالیس ہزار نیٹو فوجی موجود ہیں۔ان میں انتیس ہزار امریکی اور تین سو پولش فوجی ہیں۔نیٹو کے تحت تمام لڑاکا دستے تیرہ سال کے بعد دسمبر تک جنگ زدہ ملک سے واپس چلے جائیں گے۔تاہم ان میں سے بارہ ہزار فوجی 2015ء کے آخر تک افغانستان ہی میں موجود رہیں گے اور وہ افغان سکیورٹی فورسز کی تربیت کا کام انجام دیں گے۔