.

ملکہ برطانیہ کا مابعد ریفرینڈم قومی اتحاد پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ کی ملکہ الزبتھ دوم نے اسکاٹ لینڈ میں منعقدہ ریفرینڈم میں آزادی کے خلاف ووٹ کے بعد اپنی رعایا پر زوردیا ہے کہ وہ اپنے اختلافات کو بھلا کر باہمی احترام پر مبنی اتحاد کا مظاہرہ کرے۔

ملکہ برطانیہ اس وقت اسکاٹ لینڈ میں واقع اپنی اسٹیٹ بالمورل میں قیام پذیر ہیں۔اسکاٹ لینڈ میں ریفرینڈم کے انعقاد کے ایک روز بعد بکنگھم پیلس سے ان کا ایک بیان جاری کیا گیا ہے۔اس میں انھوں نے تسلیم کیا ہے کہ ریفرینڈم کے لیے مہم کے دوران اسکاٹ لینڈ کی علاحدگی اور برطانیہ کے ساتھ اتحاد کے حامیوں کے درمیان سخت محاذآرائی رہی ہے اور ان کے ایک دوسرے کے خلاف جذبات اور احساسات زوروں پر رہے ہیں لیکن یہ ملک کی جمہوری روایات کا حصہ ہے اور ایک دوسرے کے احساسات کو سمجھنے سے ہی ان میں کمی واقع ہوگی۔

ملکہ نے کہا ہے کہ ''برطانوی مجموعی طور پر اسکاٹ لینڈ سے محبت کا رجحان رکھتے ہیں۔اس سے انھیں متحد ہونے میں مدد ملے گی''۔انھوں نے تمام شہریوں پر زوردیا ہے کہ وہ اسکاٹ لینڈ اور ملک کے دوسرے حصوں کے مستقبل کے لیے تعمیری انداز میں کام کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ ''میں اور میراخاندان اس اہم کام میں آپ کی مدد کریں گے''۔

واضح رہے کہ ملکہ برطانیہ نے ریفرینڈم کے دوران کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے حالانکہ متعدد سیاست دانوں نے یونین کے حق میں شاہی بیان کے اجراء کا مطالبہ کیا تھا لیکن شاہی محل کی جانب سے جاری کردہ بیان میں صرف یہ کہا گیا تھا کہ ملکہ الزبتھ سیاست سے بالا تر ہیں اور وہ ریفرینڈم کی مہم پر اثرانداز ہونے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتی ہیں۔