.

جنوبی افریقہ :پریٹوریا میں مراکشی سفارت کار قتل

مہمان خانے سے خون میں لت پت لاش ملی ہے،تحقیقات کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی افریقہ کے دارالحکومت پریٹوریا میں مراکش کا ایک سفارت کار مردہ حالت میں پایا گیا ہے۔شُبہ ہے کہ اس کو قتل کیا گیا ہے اور مراکش کی وزارت خارجہ نے پریٹوریا میں حکام کے ساتھ مل کر اس کی موت کی وجوہ کے تعیّن کے لیے تحقیقات شروع کردی ہے۔

مراکشی وزارت خارجہ نے منگل کو جای کردہ ایک بیان میں بتایا ہے کہ فاطمی نورالدین پریٹوریا میں سفارت خانے میں قونصلر امور کا آفیسر انچارج تھا،اس کو قتل کیا گیا ہے لیکن فوری طور پر اس کی موت کی وجوہ کا پتا نہیں چل سکا ہے۔

ایک مراکشی سفارت کار نے بتایا ہے کہ جنوبی افریقہ کے دارالحکومت میں مقتول نورالدین کی اس کے مہمان خانے (گیسٹ ہاؤس) سے خون میں لت پت لاش ملی تھی۔پولیس اس معاملے میں کچھ کہنے سے محتاط ہے اور یہ ڈکیتی کی واردات لگتی ہے۔

مراکش کی خبررساں ایجنسی میپ نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ مقتول سفارت کار اپنے اپارٹمنٹ میں اکیلا رہتا تھا۔وہ جب معمول کے مطابق وقت پر دفتر نہیں پہنچا اور اس کا فون بھی بند تھا تو پھر اس کے ساتھیوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی کیونکہ وہ ہمیشہ بروقت دفتر پہنچتا تھا۔

اے ایف پی کی اطلاع کے مطابق سیلولر فون جائے وقوعہ سے غائب تھا لیکن یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ نورالدین کے گھر پر کوئی نقد رقم بھی موجود تھی یا نہیں۔پولیس نے واقعے کی تفتیش شروع کردی ہے۔مراکش کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ وہ اپنے سفارت کار کے قتل کے بعد جنوبی افریقی حکام سے مل کر انتظامی اور قانونی اقدامات کررہی ہے۔