.

امریکا:سرکاری عمارتوں کی سکیورٹی میں اضافہ

دہشت گردی کے ممکنہ حملوں کے پیش نظر اقدام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے دہشت گردی کے حملوں کے خطرے کے پیش نظر دارالحکومت واشنگٹن اور دوسرے بڑے شہروں میں سرکاری عمارتوں کی سکیورٹی میں اضافہ کر دیا ہے۔

امریکا کے سیکریٹری (وزیر) برائے ہوم لینڈ سکیورٹی جیہ جانسن نے منگل کی شب ایک بیان میں کہا ہے کہ ''اس اقدام کی وجوہ بڑی واضح ہیں اور وہ یہ کہ دہشت گرد تنظیمیں قانون نافذ کرنے والے حکام اور دوسرے سرکاری عہدے داروں سمیت ملکی سرزمین پر حملوں کی دھمکیاں دے رہی ہیں۔ کینیڈا میں حال ہی میں تشدد کے ایک واقعے میں سرکاری اہلکاروں اور تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا ہے''۔

انھوں نے بیان میں مزید کہا ہے کہ ''دنیا بھر میں رونما ہونے والے واقعات اس بات کے متقاضی ہیں کہ امریکا ،سرکاری تنصیبات اور ہمارے اہلکاروں کے تحفظ کے لیے نگرانی سخت کر دی جائے''۔

امریکا میں سکیورٹی کے یہ سخت اقدامات کینیڈا میں گذشتہ ہفتے مسلح افراد کے دو حملوں کے بعد کیے جارہے ہیں۔ ان حملوں میں دو فوجی ہلاک ہوگئے تھے اور یہ امریکا اور کینیڈا کی جانب سے شام اور عراق میں برسرپیکار سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامی (داعش) کے خلاف فضائی مہم میں شرکت کے بعد کیے گئے ہیں۔ کینیڈین پولیس کا کہنا ہے کہ دونوں حملہ آور نو مسلم تھے اور وہ انتہا پسندانہ خیالات کے حامل تھے۔