.

بورکینا فاسو : فوج نے صدر کو چلتا کیا

ملک گیر احتجاجی مظاہروں کے بعد صدر عہدے سے برخواست

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افریقی ملک بورکینا فاسو کی مسلح افواج نے صدر بلیز کمپا آور کو ان کے خلاف احتجاجی مظاہروں کے بعد چلتا کیا ہے۔

فوج کے کرنل بوئریما فارٹا نے آرمی ہیڈکوارٹرز کے سامنے جمع ہزاروں مظاہرین کو بتایا ہے کہ ''صدر کمپا آور اب اقتدار میں نہیں رہے ہیں''۔بورکینا فاسو کی پارلیمان پہلے ہی ملک گیر احتجاجی مظاہروں کے بعد تحلیل کردی گئی ہے اور ایک عبوری حکومت قائم کی جاچکی ہے۔

درایں اثناء فرانسیسی وزیرخارجہ لوراں فابیئس نے کہا ہے کہ انھوں نے بورکینا فاسو میں متعین اپنے سفیر سے کہا ہے کہ وہ صورت حال کو پُرامن بنانے کے لیے کوشش کریں اور اس سلسلے میں سہولت کنندہ کا کردار ادا کریں۔انھوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بورکینا فاسو میں نئی حکومت کا قیام فرانس کی ذمے داری نہیں ہے۔