.

سعودی نصاب تعلیم میں کتابت کی ’سنگین غلطی‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں اسکول کے نصاب میں چوتھی جماعت میں شامل تجوید کی ایک کتاب میں قرآنی آیت کی کتابت کی غلطی کی نشان دہی کے بعد عوامی حلقوں کی جانب سے شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔

دوسری جانب حکومت نے غلطی کی درستی کے ساتھ بے پروائی برتنے والے متعلقہ حکام کے خلاف سخت انضباطی کارروائی کا حکم دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حال ہی میں سوشل میڈیا پر ایک فوٹیج سامنے آئی تھی جس میں انکشاف کیا گیا تھا کہ نصاب میں شامل تجوید کی ایک کتاب میں سورہ النحل کی آیت نمبر تین غلط لکھی گئی ہے۔ ویڈیو کے منظر عام پر آنے کے بعد نصاب تعلیم کی تیاری، اس کی تدوین واشاعت اور مسودات پر نظرثانی کرنے والوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

شہریوں نے محکمہ تعلیم کے متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ غلطی کی اصلاح کے ساتھ ساتھ ایسے واقعات کے مستقل تدارک کے لیے عملی اقدامات کریں۔

سعودی وزارت تعلیم نے نصاب تعلیم میں آیت قرآنی کی غلط کتابت کا نوٹس لے لیا ہے۔ اس حوالے سے جلد نئی حکمت عملی کا اعلان کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں کسی نصابی کتاب میں غلطی کی نشاندہی کا یہ پہلا واقعہ نہیں بلکہ ماضی میں بھی اس طرح کے کئی واقعات سامنے آتے رہے ہیں۔

ایسے واقعات سامنے آنے سے مسودات کی تیاری اور ان پر نظرثانی کرنے والوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان اٹھتا ہے۔ پروف کی غلطی کی ذمہ داری طباعت و اشاعت کے شعبے پر نہیں ڈالی جا سکتی۔