لندن: مشتبہ پیکٹ کی اطلاع پر پارلیمان کی عمارت خالی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی پارلیمان کے ایک حصے کو ایک مشتبہ پیکٹ کی موجودگی کی اطلاع پر مختصر وقت کے لیے خالی کرالیا گیا ہے اور مکمل جامہ تلاشی کے بعد ملازمین اور ارکان پارلیمان کو دوبارہ واپس دفاتر میں جانے کی اجازت دی گئی ہے۔

لندن میٹرو پولیٹن پولیس کی خاتون ترجمان نے بتایا ہے کہ پارلیمان کی عمارت کے بالمقابل واقع سرکاری عمارت پورٹ کلیس ہاؤس اور ویسٹ منسٹر زیرزمین اسٹیشن کا بالائی حصہ بھی خالی کرالیا گیا ہے اور پولیس تحقیقات کررہی ہے۔

موقع پر موجود پولیس افسروں کا کہنا ہے کہ اسٹیشن کو بند کردیا گیا ہے اور پولیس کی موٹربائیکس کے ذریعے کاروں اور عام لوگوں کو شاہراہ پر آنے سے روکا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ برطانیہ میں اگست میں شام اور عراق میں برسر پیکار سخت گیرگروپ داعش سے وابستہ جنگجوؤں کی واپسی اور ان کے ممکنہ حملوں کے خدشے کے پیش نظر دہشت گردی کے خطرے کو دوسری خطرناک سطح تک بلند کردیا گیا تھا۔برطانوی حکام کو یہ خدشات لاحق ہیں کہ عراق اور شام میں لڑنے والے برطانوی جنگجو وطن واپسی پر گڑ بڑ کرسکتے ہیں۔

بعض تجزیہ کاروں کے بہ قول اس وقت عراق اور شام میں ہزاروں غیرملکی جنگجو لڑرہے ہیں۔گذشتہ ماہ کینیڈا کے دارالحکومت اوٹاوا میں ایک مسلح شخص کے پارلیمان پر حملے کے بعد لندن میں بھی حفظ ماتقدم کے طور پر مسلح فوجیوں کو سرکاری دفاتر اور مشہور سیاحتی مقام کے باہر تعینات کردیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں