داعش کی 'بربریت' ہمیں ڈرا نہیں سکتی: جان کیری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ عراق اور شام کے اندر دہشت گردی میں ملوث دولت اسلامی "داعش" کو ہر صورت میں شکست دینا ہو گی۔ اگر داعش کو شکست نہ دے سکے تو مشرق وسطیٰ کا کوئی مستقبل نہیں۔

امریکی وزیر خارجہ نے ان خیالات کا اظہار واشنگٹن میں ایک انٹرویو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری داعش کو امریکی شہری پیٹر کاسگ کے قتل جیسے واقعات سے خوف زدہ کرنے کی اجازت نہیں دے گی۔ انہوں نے کہا کہ داعش کے خلاف جنگ تہذیب اور درندگی کے درمیان فرق کی جنگ ہے۔ اگر ہم اس جنگ میں ناکام ہوئے تو مشرق وسطیٰ تباہ ہو جائے گا۔

انہوں نے شام اور عراق میں "داعش" کے ٹھکانوں پر فضائی حملے تیز کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا اور اعتراف کیا کہ امریکا کی قیادت میں اتحادی فوجیں روزانہ کی بنیاد پر داعش کے ٹھکانوں کو نشانہ بنا رہی ہیں جس کے نتیجے میں داعشی جنگجو ہلاک ہو رہے ہیں۔ پچھلے چند ہفتوں کے دوران کی گئی کارروائیوں میں داعش کے کئی اہم مراکز کو تباہ کیا گیا ہے۔

جان کیری کا کہنا تھا کہ امریکی یرغمالی شہر پیٹر کاسگ اور اٹھارہ شامی فوجیوں کے بہیمانہ قتل سے ہمیں خوف زدہ کرنے کی کوشش کی گئی ہے لیکن داعش کو تباہ کرنے تک اپنے اتحادیوں کے ساتھ مل کر جنگ کریں گے۔ داعش کی دہشت گردی ہمیں خوف زدہ نہیں کر سکتی ہے۔ مسٹر کیری نے خبردار کیا کہ اگر ہم بر وقت داعش کو عراق اور شام کی سرزمین پر کچلنے میں کامیاب نہ ہوئے تو دہشت گرد جلد ہی مشرق وسطیٰ کے دوسرے ممالک میں پھیل کر خود کش حملے شروع کر دیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں