کینیا میں دہشتگردی میں ملوث برطانوی خاتون صومالیہ پہنچ گئی

خاتون کے پہلے برطانوی شوہر نے ''سیون سیون'' خود کش حملہ کیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی نو مسلم اور جہادی خاتون المعروف ''سفید فام بیوہ'' نے اپنے عسکریت پسند شوہر مارکو کوسٹا کے ساتھ صومالیہ میں رہائش کر لی ہے۔

اس برطانوی خاتون پر پچھلے سال کینیا کے دارالحکومت میں ایک اہم شاپنگ مال پر حملہ کرنے میں ملوث ہونے کا الزام عاید ہوا تھا۔

برطانوی خاتون شہری جس کا برطانوی نام سامنتھا لیوتھ وایٹ ہے کے بارے میں کینیا سے معلوم ہوا ہے کہ وہ زندہ ہے اور اچھی صحت میں ہوتے ہوئے جنوبی صومالیہ میں رہ رہی ہے۔

اس بارے میں برطانوی اخبار ڈیلی میل کواس کے پاس خاتون کے جہادی شوہر کوسٹا کا ایسا پاسپورٹ ملا ہے جس پر جعلسازی سے کوسٹا کی تصویر لگائی گئی ہے۔

واضح رہے اس برطانوی خاتون پر الزام لگایا گیا تھا کہ اس نے 2011 میں نیروبی میں حملہ کر کے دو پولیس افسروں کو ہلاک کر دیا تھا۔ اس سے پہلے سامنتھا پر جنوبی افریقہ کا جعلی پاسپورٹ استعمال کرنے کا بھی الزام عاید ہوا تھا۔

اخبار کے مطابق اس جہادی جوڑے کی ایسی تصاویر بھی ملی ہیں جو انہوں اپنے گھر میں ہوتے ہوئے موبائل فون میں لگے کیمرے سے بنائی ہیں۔ پولیس ان کی اور ان کے دو بچوں کی تصاویر کی مدد سے انہیں تلاش کرنے کی کوشش میں ہے۔

بتایا گیا ہے کہ خاتون کی برطانیہ میں گیرمینے لنڈسے سے شادی ہوئی تھی جو لندن میں سیون سیون کے نام سے شہرت پانے والے 2005 کے خود کش حملے میں کام آگیا تھا۔ 2005 میں بیوہ ہونے کے بعد 2008 میں اس نے جنوبی افریقہ میں ہوتے ہوئے سلیم نامی شخص سے شادی کر لی۔

جبکہ سامنتھا نے نیروبی کے ویسٹ گیٹ شاپنگ مال پر جس حملے میں حصہ لیا تھا اس میں 60 افراد ہلاک ہو ئے تھے۔ وہ تب سے کینیا کے سکیورٹی اداروں کو مطلوب ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں