.

ہونڈیورس کی ملکہ حسن اپنی ہمشیرہ سمیت قتل

قتل کے الزام میں مقتولہ بہن کا بوائے فرینڈ گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ہونڈیورس سے تعلق رکھنے والی دوشیزہ اور ایک سال قبل ملکہ حسن کا تاج سر پر سجانے والی ماریا خوسیہ الفاراڈا کو اس کی بڑی ہمیشرہ سمیت قتل کر دیا گیا ہے۔ ایک ہفتہ قبل ماریا اپنی ہمشیرہ کے ہمراہ اس کے ایک بوائے فرینڈ کی سالگرہ کی تقریب میں شرکت کے لیے گئی تھی جہاں وہ دونوں غائب ہو گئی تھیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ھنڈوراس پولیس نے ایک ہفتے کی تلاش کے بعد بالآخر ان کی میتیں حاصل کرنے میں کرنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس کی تلاشی کے دوران تفتیشی کتوں نے سالگرہ کی تقریب کے آس پاس کے مقامات پر تلاشی شروع کی تو انہوں نے پانی کی ایک نہر کے کنارے سے دفن کی گئی ان کی میتیں نکال لیں۔

تاہم ایک دوسرے ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ماریہ اور اس کی ہمیشرہ صوفیا کو قتل کے بعد ایک ویران علاقے میں پھینک دیا گیا تھا۔

مقتول لڑکیوں کی والدہ کی درخواست پر صوفیہ کے بوائے فرینڈ کو حراست میں لے لیا گیا ہے تاہم اس امرکی تصدیق نہیں ہو سکی کہ آیا قتل کی اس واردات میں وہ ملوث ہے یا نہیں۔ پولیس نے شبے میں‌ صوفیا کے بوائے فرینڈ کے تین اور ساتھی بھی حراست میں لیے ہیں۔

قاتل کی شناخت؟

ایک مقامی نیوز ویب پورٹل "پیرو 21" نے پولیس کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں اس نے دعویٰ کیاہے کہ ملکہ حسن اور اس کی ہمشیرہ صوفیا کو بوائے فرینڈ بلورٹارکو رویتھ نے اپنے متعدد ساتھیوں سے مل کر قتل کیا ہے۔

رپورٹ میں ایک عینی شاہد کے حوالے سے بتایا ہے کہ بلورٹارو کی سالگرہ کی تقریب میں رقص و سرود جاری تھا۔ اس دوران ملکہ حسن ماریہ اور اس کی ہمیشرہ اٹھ کر جانے لگیں تو صوفیا کے دوست اور دو دوسرے افراد نے انہیں جبرا بیٹھنے پر مجبور کیا۔ جب سب لوگ جا چکے تب بھی دونوں بہنوں کو نہ جانے دیا گیا۔

اس دوران ان کا ایک اور ساتھی بغیر نمبر پلیٹ کےکار پر ان کے قریب پہنچا۔ تینوں نے مل کر دونوں بہنوں کو گھیرا اور پستول سے صوفیا کو گولیاں مار قتل کر دیا۔ ماریا نے فرار ہونے کی کوشش کی لیکن فرار کے دوران اسے بھی گولیاں مار ہلاک کر دیا گیا۔ بعد ازاں دونوں کی میتیں ایک نہر کے کنارے گڑھا کھود کر اس میں ڈال دی گئیں۔

ایک لبنانی نژاد ہونڈیورس کی نیوز کاسٹر سلواڈور نصراللہ نے پولیس کو بتایا کہ ماریہ خوسیہ اور اس کی ہمشیرہ صوفیا کو ایک دوست کی سالگرہ کی تقریب سے نکلتے ہوئے گولیاں ماری گئیں۔ انہوں نے بتایا کہ ماریہ نے 14 دسمبر کو لندن میں ایک عالمی مقابلہ حسن میں شرکت کے لیے پہنچنا تھا۔ نصراللہ نے کہا کہ عالمی مقابلہ حسن کے منتظمین کو بتا دیا گیا تھا کہ ماریہ اور اس کی ہمشیرہ کو ایک ہفتہ قبل اغواء کر لیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ وسطی امریکی ممالک میں ہونڈیورس میں قتل اور اغواء کی وارداتیں پڑوسی ملکوں وینزویلا، پیلییز وال سلفاڈور سے زیادہ ہیں۔ وہاں پر روزمرہ کی بنیاد پرقتل اور اغواء کی وارداتیں ہوتی ہیں اور ایک اندازے کے مطابق ایک لاکھ کی آبادی میں 90 افراد کو قتل کر دیا جاتا ہے۔