.

الجزائری فوج نے یرغمال فرانسیسی کے قاتل کو ہلاک کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائر کے وزیرانصاف طیب لوح نے اطلاع دی ہے کہ فوج نے گذشتہ ماہ فرانسیسی یرغمالی ہرو گورڈیل کا سرقلم کرنے میں ملوّث ایک مشتبہ جہادی کو ہلاک کردیا تھا۔

وزیرطیب لوح نے بدھ کو صحافیوں کو بتایا ہے کہ ''فوج نے اکتوبر میں انسداد دہشت گردی کی ایک کارروائی کے دوران اس مشتبہ شخص کو ہلاک کیا تھا''۔مگر انھوں نے اس کارروائی کی مزید تفصیل نہیں بتائی ہے۔

واضح رہے کہ عراق اور شام میں برسرپیکار دولت اسلامی (داعش) سے وابستہ الجزائر کے ایک جنگجو گروپ جند الخلیفہ نے ستمبر میں پچپن سالہ فرانسیسی ہرو گورڈیل کو اغوا کیا تھا اور بعد میں اس کی ایک ویڈیو جاری کی تھی جس میں نقاب پوش جنگجوؤں کو اس کوہ پیما گائیڈ کا سرقلم کرتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

اس گروپ نے دھمکی دی تھی کہ اگر فرانس نے چوبیس گھنٹے کے اندر عراق میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملے نہ رو کے تو اس کو قتل کر دیا جائے گا۔جہادیوں اور دہشت گردوں کی سرگرمیوں کی نگرانی کرنے والے امریکا میں قائم سائٹ انٹیلی جنس گروپ نے جند الخلیفہ کی جانب سے ہرو گورڈیل کے قتل کی ویڈیو جاری ہونے کی اطلاع دی تھی۔مقتول فرانس کے شہر نائس کا رہنے والا تھا۔