.

کابل: خودکش حملے میں برطانوی سمیت 6 افراد ہلاک

افغان دارالحکومت کے وسطی علاقے میں ایک اور دھماکا اور فائرنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک خودکش بم دھماکے کے نتیجے میں ایک برطانوی شہری سمیت چھے افراد ہلاک اور تیس زخمی ہوگئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق کابل میں جلال آباد روڈ پر ایک بمبار نے اپنی بارود سے بھری کار برطانوی سفارت خانے کی ایک گاڑی سے ٹکرادی ہے جس سے سفارت خانے کے دو ملازمین سمیت چھے افراد مارے گئے ہیں۔

برطانوی وزیرخارجہ فلپ ہیمنڈ نے لندن سے جاری کردہ ایک بیان میں سفارت خانے کی سکیورٹی ٹیم کے ایک برطانوی رکن اور ایک افغان ملازم کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔انھوں نے مزید کہا ہے کہ حملے میں ایک اور برطانوی سکیورٹی گارڈ زخمی ہوا ہے۔افغان حکام کے مطابق دھماکے میں تیس راہگیر زخمی ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ برطانیہ نے اسی ہفتے جنوبی افغانستان میں تعینات اپنے تمام فوجیوں کو تیرہ سال کے بعد واپس بلا لیا ہے اور قندھار سے شاہی فضائیہ کے تمام اہلکار واپس چلے گئے ہیں۔البتہ بعض برطانوی فوجی افسر کابل کے نواح میں واقع افغان فوج کے تربیتی ادارے میں آیندہ سال سے تدریسی نوعیت کی خدمات انجام دیں گے۔

درایں اثناء کابل کے وسطی علاقے وزیر اکبر خان میں جمعرات کی شام ایک اور زوردار دھماکا ہوا ہے اور اس کے بعد فائرنگ کی آوازیں سنی گئی ہیں۔اس علاقے میں بہت سے غیرملکی سفارت خانے قائم ہیں۔اس واقعے میں فوری طور پر کسی کے ہلاک یا زخمی ہونے کی اطلاع ہے اورنہ کسی گروپ نے ان دونوں حملوں کی ذمے داری قبول کی ہے۔