.

مراکش میں افریقہ کی بلند ترین عمارت کا سعودی منصوبہ

114 منزلہ عمارت پر ایک ارب ڈالر خرچ آئیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک سعودی سرمایہ کار نے مراکش میں بلند ترین عمارت تعمیر کرنے کا اعلان کیا ہے۔ منصوبے کے منتظم کے مطابق 114 منزلہ عمارت کی تعمیر اگلے سال جون میں شروع ہو گی۔

مراکش کے شہر کاسا بلانکا میں یہ فلک بوس عمارت 1782 فٹ بلندی کی حامل ہو گی اس ناطے یہ عممارت جوہانسبرگ کی بلند ترین عمارت سے بھی اونچی ہو گی۔

جوہانسبرگ کی یہ بلند ترین عمارت اس وقت افریقی دنیا کی سب سے اونچی سمجھی جاتی ہے۔ مراکشی شہر کاسا بلانکا میں بلند ترین عمارت کے منصوبے کے منتظم احمد سنتالو نے کہا نئی عمارت کے مقابلے میں تمام افریقی ممالک میں کوئی عمارت نہ ہو گی۔ یہ منصوبہ سعودی تاجر شیخ طارق بن لادن کی کمپنی کی دبئی میں قائم کمپنی مڈل ایسٹ ڈویلپمنٹ ایل ایل سی نے بنایا ہے۔ اس منصوبے کی لاگت کا تخمینہ ایک ارب ڈالر کا ہے۔

امکانی طور پر اس بلند ترین عمارت کا نام مراکش کے شاہ محمد ششم کے حوالے سے ہو گا۔ پراجیکٹ کے انچارج نے بتایا اس مقصد کے لیے مراکش کا انتخاب کرنے کی وجہ یہ ہے کہ مراکش افریقی دنیا کا ''گیٹ وے'' ہے۔

اس عظیم الشان ٹاور کی تعمیر 2018 میں مکمل ہو گی۔ اس عظیم الشان عمارت کے 114 منزلیں بنانے کی وجہ قرآن پاک کی 114 سورتیں بتائی گئیں۔

عمارت کا مجموعی رقبہ 25 ایکڑوں پر مشتمل ہو گا۔ کاسا بلانکا مراکش کا تجارتی مرکز ہے۔ قبل ازیں دبئی کا برج الخلیفہ دنیا کا بلند ترین بلند ترین ٹاور سمجھا جاتا ہے۔