پیرس: کوشراسٹور پر حملہ آور کولیبالی داعش کا رکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پیرس میں ایک خاتون پولیس افسر کو فائرنگ کر کے ہلاک کرنے اور یہود کے ملکیتی سپر اسٹور میں دھاوا بولنے سیاہ فام امیدی کولیبالی کے مشابہ ایک شخص کی ویڈیو منظرعام پر آئی ہے جس میں وہ خود کو عراق اور شام میں برسرپیکار جنگجو گروپ دولت اسلامی کا رکن بتا رہا ہے۔

یہ ویڈیو کولیبالی کی پیرس میں سپر اسٹور میں فرانسیسی پولیس کی کارروائی میں ہلاکت کے دو روز بعد اتوار کو انٹرنیٹ پر جاری کی گئی ہے۔وہ آن کیمرا کَہ رہا ہے کہ ''وہ پولیس کے مقابلے میں سامنے آیا تھا''۔تصویر کے اوپر پوسٹ تحریر میں اس بات کی تصدیق کی گئی ہے کہ اس نے پیرس کے جنوب میں گذشتہ جمعرات کو ایک خاتون پولیس اہلکار کو قتل کیا تھا اور اس سے ایک روز بعد سپر مارکیٹ پر حملہ کیا تھا۔

یہودیوں کے ملکیتی اس گراسری اسٹور میں سکیورٹی فورسز کی کارروائی میں کولیبالی اور اس کے ہاتھوں یرغمال چار افراد ہلاک ہوگئے تھے۔فرانسیسی پولیس نے پیرس کے شمال مشرقی علاقے میں چارلی ہیبڈو کے دفتر پر حملے میں مطلوب دونوں مشتبہ بھائیوں کو ہلاک کرنے کے بعد یہود کے ملکیتی گراسری اسٹور میں دھاوا بولا تھا۔

جمعہ کی دوپہرایک مسلح شخص نے اس گراسری اسٹور میں دھاوا بولنے کے بعد متعدد افراد کو اسلحے کی نوک پر یرغمال بنا لیا تھا۔اس شخص نے دھمکی دی تھی کہ اگر کواشی برادران کو کوئی نقصان پہنچا تو وہ یرغمال افراد کو ہلاک کردے گا۔اس نے فائرنگ کرکے متعدد افراد کو زخمی کردیا تھا اور بعض گراسری اسٹور سے فرار کی کوشش کے دوران زخمی ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں