.

سابق افریقی جنگجو کی چارلی اہیبڈو پر حملے کی حمایت

توہین آمیز خاکے شائع کرنے والوں پر حملہ جائز ہے: مختار بالمختار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائر کے ممتاز عسکری رہنما اور القاعدہ کے سابق جنگجو مختار بالمختار نے توہین آمیز خاکے شائع کرنے والے فرانسیسی جریدے پر حملے کی تعریف کی ہے۔ مختار بالمختار نے کہا مغربی ممالک میں موجود مسلمانوں کو ایسے حملے جاری رکھنے چاہییں۔

اپنے جاری کردہ ایک بیان میں اس عسکریت پسند رہنما نے کہا ''مغربی جارحیت کے خلاف اس طرح کے حملے جائز ہیں، فرانس افریقی علاقے صحارا میں بھی اسلام پسند مسلح گروپوں کو نشانہ بنا رہا ہے۔

اس بیان کو سامنے لانے والی ویب سائٹ کے مطابق یہ بیان عسکری گروپ المرابطون کی طرف سے جاری کی گیا ہے۔ یہ گروپ دو ہزار تیرہ میں قائم کیا گیا تھا۔ اس مسلح گروپ کو اس کے نعرے مغربی افریقہ میں جہاد اور اتحاد کے حوالے سے جانا جاتا ہے۔

واضح رہے فرانس میں نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی توہین پر مبنی خاکے شائع کرنے والے اس جرید کے دفتر پر حملے اور بعد کے واقعات میں مجموعی طور پر سترہ افراد ہلاک ہوئے تھے۔