بھری محفل میں کلونی اہلیہ کی تعریف میں رطب اللسان

فلمی ستارے حقیقی زندگی کا رومانس دیکھ کر حیران رہ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ہالی وڈ میں رومان پرور اداکاری کے لئے مشہور جارج کلونی اور ان کی لبنانی نژاد چہیتی اہلیہ امل علم الدین شادی سے قبل اور اس کے بعد مسلسل عالمی ابلاغی توجہ کا مرکز ہیں۔ میاں بیوی لاکھوں کے مجمع میں بھی باہمی رومانس کے برملا اظہار سے نہیں چونکتے۔

اس کا حالیہ مظاہرہ ’’گولڈن گلوب ایوارڈ‘‘ کی تقریب میں دیکھا گیا جب مسٹر کلونی نے اپنی لاڈلی بیوی سے اپنی گہری محبت اظہار نہایت اچھوتے انداز میں اظہار کیا۔ یہ تقریب دراصل فلمی دنیا میں نمایاں خدمات سر انجام دینے والوں کے اعزاز میں منعقد کی گئی جس میں نامور فنکاروں کو انعام و اکرام سے نوازا گیا۔ جارج کلونی کو بھی فلمی صنعت میں خدمات کے اعتراف میں ’’سیسل بی ڈومیل‘‘ ایوارڈ سے نوازا گیا۔

تقریب میں اظہار خیال کے لیے اسٹیج پر آنے کے بعد جارج کلونی حاضرین وناظرین کی توجہ کا خصوصی مرکز تھے۔ انہوں نے اپنی بیوی امل علم الدین کے ساتھ محبت کا متعدد بار تذکرہ کیا۔ ترپن سالہ کلونی کا کہنا تھا کہ "مجھے آج اپنے ساتھی اداکاروں اور دوستوں کے ساتھ مل کر بہت خوشی ہوئی۔ اس پرمسرت موقع پر میں اپنی بیوی علم الدین کی محبت کو بھی نہیں بھلا سکتا۔

جارج کلونی کا کہنا تھاکہ ’’حقیقی خوشی یہ ہے کہ جب آپ کسی ایسے شخص سے محبت کرتے ہیں جو آپ کو بھی خود سے بڑھ کر چاہتا ہے۔ حقیقی محبت وہی ہے جسے آپ پوری عمر قائم رکھتے ہیں۔ اسے پانے کے لیے آپ کو طویل مدت انتظار بھی کرنا پڑتا ہے۔ مجھے بھی حقیقی خوشی اور محبت پانے میں 53 سال انتظار کرنا پڑا‘‘۔

تقریب میں ہالی وڈ کے ستاروں کی بڑی تعداد نے شرکت نے بارونق بنا دیا۔ تاہم امل علم الدین اور اس کے محبوب شوہر جارج کلونی نے جب سرخ قالین پر قدم رکھے تو صحافیوں کے تمام کیمروں کا رخ اور حاضرین کی نظریں رومانوی محبت کے اسیر جوڑے پر گڑھ گئی تھیں۔سوشل میڈیا بالخصوص ٹویٹر پر مداحوں کے تبصروں کی بھرمار تھی۔

امل علم الدین تقریب میں سیاہ رنگ کے کلاسیکی سوٹ میں جلوہ گرہوئیں اور کانوں میں اپنی شایان شان تیس قیراط ہیروں سے جڑے بندے اس کی چمک دھمک اور حسن کو مزید چار چاند لگا رہی تھیں۔

فلمی ستاروں کی تقریب میں شرکت اور فلمی ستاروں کے جھرمٹ میں بھی علم الدین نے اپنی سماجی شخصیت کی پہچان کو گم نہیں ہونے دیا۔ اپنے پرس کے ساتھ ساتھ اس ن ایک اسٹکر چپکا رکھا تھا جس پر فرانسیسی میں چارلی ہیبڈو جریدے کے ساتھ یکجہتی کے الفاظ درج تھے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے پیریس میں فرانسیسی جریدے چارلی ہیبڈو کے دفتر پرمسلح افراد کے حملے میں کم سے کم سترہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں