.

فرانس: 10 مشتبہ افراد گرفتار، ٹرین اسٹیشن بند

ریلوے اسٹیشن میں بم رکھے جانے کی اطلاع کے بعد سرچ آپریشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کی پولیس نے سکیورٹی خدشات کے پیش نظر جمعہ کے روز دارالحکومت پیرس میں ایک ٹرین اسٹیشن بند کر دیا ہے۔ بم رکھے جانے کی مبینہ اطلاع کے بعد پولیس نے ٹرین اسٹیشن خالی کرا کے سرچ آپریشن کیا تاکہ کسی نئے خوفناک واقعے کے ہونے سے پہلے اس کا سدباب کیا جا سکے۔

پولیس کے ایک ذمہ دار افسر کے مطابق یہ ریلوے سٹیشن حفظ ماتقدم کے تحت بند کیا گیا تھا ۔ واضح رہے گئیر ڈی آئیسٹ پیرس میں چند بڑے ٹرین سٹیشنوں میں سے ایک ہے۔ یہ پیرس کے مشرق میں واقع شہروں اور ملک کے مشرقی حصوں میں آمد و رفت کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

دریں اثناء فرانس کے پراسیکیوٹرز آفس نے بتایا ہے کہ انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں کے دوران دس مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ یہ گرفتاریاں پچھلے ہفتے پیرس میں توہین آمیز خاکے شائع کرنے والے اخبار چارلی ہیبڈو پر حملے کے تناظر میں کی گئی ہیں۔

سرکاری ذرائع کے مطابق یہ گرفتاریاں رات گئے سے جمعہ کی صبح تک چھاپہ مار کارروائیوں میں کی گئی ہیں۔ واضح رہے چارلی ہیبڈو متعدد مرتبہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی توہین پر مبنی خاکے شائع کرنے کی جسارت کرچکا ہے۔

اس پر حالیہ حملے کے بعد اس کی فرانس اور یورپ میں پذیرائی میں اضافہ ہوا ہے جبکہ مسلمانوں میں سخت اضطراب پایا جاتا ہے۔ حملے کے بعد اپنی پہلی اشاعت میں اس جریدے نے ایک مرتبہ پھر توہین آمیز خاکے شائع کیے ہیں اور اس کی سرکولیشن ساٹھ ہزار سے پچاس لاکھ کو چھو گئی ہے۔

پاکستان کی قومی اسمبلی نے ان توہین آمیز خاکوں کے خلاف متفقہ مذمتی قرارداد منظور کی ہے جبکہ باقی مسلم دنیا میں بھی اس شر انگیزی کی سخت مذمت کی جا رہی ہے ۔ فرانس اور ہمسایہ ملک بیلجیئم میں حکام نے سکیورٹی خدشات کے پیش نظر سخت اقدامات کا فیصلہ کیا ہے اور سکیورٹی ہائی الرٹ کر دی ہے۔