.

داعش کی صدر اوباما کو قتل کرنے کی دھمکی

داعشی جنگجو کا امریکا کو ''مسلم صوبے'' میں تبدیل کرنے کا شوشا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق اور شام میں برسرپیکار سخت جنگجو گروپ داعش کے ایک رکن نے حال ہی میں جاری کردہ ویڈیو میں امریکی صدر براک اوباما کو کہیں اور نہیں ،وائٹ ہاؤس واشنگٹن میں قتل کرنے کی دھمکی دی ہے اور امریکا کو ایک ''مسلم صوبے'' میں تبدیل کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

داعش کے اس جنگجو نے ایک کرد فوجی کا سرقلم کرنے سے قبل یہ دھمکی آمیز کلمات ادا کیے ہیں۔اس کی یہ ویڈیو''موصل شہر میں پُرامن مسلمانوں پر بمباری'' کے عنوان سے جاری کی گئی ہے۔اس ویڈیو میں کرد سکیورٹی فورسز البیش المرکہ کی اسی ماہ کے آغاز میں موصل پر گولہ باری سے ہونے والی تباہی دکھائی گئی ہے اور اس کے بعد وہ پکڑے گئے کرد فوجی کا سرقلم کررہا ہے۔

داعش کے اس نقاب پوش جنگجو نے امریکا ،فرانس ،بیلجیئم اور کردوں پر حملوں کی دھمکی دی ہے اور کہا ہے کہ گروپ کے پیروکار امریکی اور کرد صدور کو قتل کریں گے اور اس کے ساتھ ساتھ وہ ان یورپی ممالک میں کار بم دھماکے کریں گے جو اس تنظیم کے خلاف امریکا کی قیادت میں اتحاد کا حصہ ہیں۔

اس جنگجو نے ویڈیو میں دعویٰ کیا ہے کہ البیش المرکہ فورسز نے موصل میں پُرامن مسلمانوں پر گولہ باری کی ہے اور امریکی صلیبیوں نے فضائی بمباری کے علاوہ زہریلی گیسوں سے بھی حملے کیے ہیں۔ویڈیو میں تباہ شدہ عمارتیں ،لاشیں اور زخمی بچوں کو بھی دکھایا گیا ہے۔

اس کے بعد وہ جہادی کرد زبان میں پوری دنیا کے لیے ایک پیغام جاری کررہا ہے اور کَہ رہا ہے کہ ''جوکوئی بھی اسلام کی مخالفت کرے گا،اس کا انجام یہی ہوگا۔اوباما جان لیجیے۔ہم امریکا پہنچیں گے اور یہ بھی جان لو کہ ہم وائٹ ہاؤس میں آپ کا سرقلم کریں گے اور امریکا کو ایک مسلم صوبے میں تبدیل کردیں گے''۔

پھر وہ فرانس اور بیلجیئم کو مخاطب کر کے یوں گویا ہوا:''ہم آپ کو یہ بتانا چاہتے ہیں کہ ہم آپ کے یہاں کار بموں اور دھماکا خیز مواد کے ساتھ آرہے ہیں اور ہم آپ کے سرقلم کردیں گے''۔

اس کے بعد ویڈیو میں داعش کا یہ جنگجو پکڑے گئے کرد فوجی کا ایک مجمعے کی موجودگی میں تیز دھار آلے سے سرقلم کردیتا ہے۔اس نے عراق کے خودمختار شمالی علاقے کردستان کے صدر مسعود بارزانی کو یہ دھمکی دی ہے کہ انھیں البیش المرکہ کی جانب سے داعش کے زیر قبضہ علاقوں پر فائر کیے گئے ہر میزائل کے بدلے میں ایک فوجی کا سر کاٹ کر بھیجا جائے گا۔

جہادیوں کی انٹرنیٹ پر سرگرمیوں کی نگرانی کرنے والے ادارے مڈل ایسٹ میڈیا ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (میمری) کے مطابق داعش نے صدر اوباما کے لیے دھمکی آمیز پیغام پر مبنی یہ ویڈیو گذشتہ سوموار کو جاری کی تھی۔اس سے دو روز قبل ہی کردفورسز نے موصل پر شدید گولہ باری کی تھی اور امریکا کی قیادت میں اتحادی ممالک کے لڑاکا طیاروں نے بمباری کی تھی۔

واضح رہے کہ عراق میں امریکا اور بعض یورپی ممالک کے جنگی طیارے داعش کے ٹھکانوں پر گذشتہ سال اگست سے فضائی بمباری کررہے ہیں جبکہ شام میں امریکا کے ساتھ بعض عرب ممالک داعش مخالف فضائی مہم میں شریک ہیں۔اتحادی طیاروں نے گذشتہ ایک ہفتے کے دوران عراق کے شہروں موصل، الرمادی ،الرتبہ ،القائم ،سامراء ،راواہ اور الاسد میں داعش کے ٹھکانوں پر بیس سے زیادہ فضائی حملے کیے ہیں۔