.

شاہ سلمان:اردنی پائیلٹ کو زندہ جلانے کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے عراق اور شام میں برسرپیکار سخت گیر دہشت گرد گروپ داعش کے ہاتھوں اردن کے پائیلٹ کو زندہ جلائے جانے کی شدید مذمت کی ہے اور اس کی اندوہناک موت پر شاہ عبداللہ دوم سے تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق شاہ سلمان نے پائیلٹ معاذ الکساسبہ کے اذیت ناک قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ داعش کا فعل اسلام اور انسانیت کے منافی ہے۔

داعش کے حامیوں نے منگل کو انٹرنیٹ پر ایک ویڈیو جاری کی ہے جس میں مسلح نقاب پوش جنگجو ایک تباہ شدہ عمارت کے احاطے میں اردن کے یرغمال پائیلٹ کو زندہ جلا رہے ہیں۔داعش کے جنگجوؤں نے اس کو ایک پنجرے میں بند کیا ہوا ہے تاکہ وہ بھاگ نہ سکے۔وہ اس کے جسم پر اورپنجرے کے آس پاس پیٹرول چھڑک کر آگ لگا دیتے ہیں۔

مقتول کے والد نے اردنی حکومت پر زوردیا ہے کہ وہ ان کے بیٹے کی اندوہناک موت کا انتقام لے۔انھوں نے امریکا کی قیادت میں اتحادیوں سے داعش کے خلاف ''اذیت ناک'' فضائی حملوں کا مطالبہ کیا ہے۔اردن نے اپنے پائیلٹ کے قتل کے بعد داعش کے خلاف مہم میں زیادہ کردار ادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔واضح رہے کہ اردن کے لڑاکا طیارے شام میں داعش کے خلاف فضائی مہم میں شریک ہیں۔