.

مودی نے دہلی میں'عام آدمی' کی جیت تسلیم کر لی

نئی دہلی کے ریاستی انتخاب میں بی جے پی کو صرف آٹھ نشتیں ملیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی کے ریاستی انتخابات میں عام آدمی پارٹی 'آپ' کو ایک بار پھر واضح اکثریت حاصل ہونے کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی نے فون کرکے اروند کیجریوال کو مبارکباد دی ہے۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے ریاسی انتخابات میں اپنی شکست کو تسلیم کرتے ہوئے اروند کیجریوال کو اپنے مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔

یاد رہے کہ تین روز قبل نئی دہلی میں ریاستی اسمبلی کی 70 نشستوں کے لیے انتخابات ہوئے تھے جس میں ایک کروڑ سے زائد ووٹرز نے حق رائے دہی استعمال کیا۔

دہلی میں حکومت قائم کرنے کے لیے 36 نشتوں کی ضرورت پڑتی ہے، سنہ 2012ء میں ہونے والے انتخابات میں عام آدمی پارٹی نے 28، بھارتیہ جنتہ پارٹی (بی جے بی) نے 31 اور کانگریس نے 8 نشستیں حاصل کی تھیں جس کے بعد عام آدمی پارٹی نے کانگریس کی مدد سے حکومت قائم کی تھی مگر 49 دن کے بعد وزیر اعلی اروند کیجری وال نے استعفی دے دیا تھا۔ اروند کیجری وال کے استعفی کی وجہ بدعنوانی کے خلاف قانون سازی نہ ہونا تھی۔

جامع مسجد نئی دہلی کے امام سید احمد بخاری نے بھی اپنی حمایت عام آدمی پارٹی کے پلڑے میں ڈال دی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ عام آدمی پارٹی ایک سیکولر جماعت ہے، مسلمانوں کو خوشحالی کے لیے اسے ووٹ دینا چاہیے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق غیر حتمی طور پر سامنے آنے والے نتائج میں عام آدمی پارٹی نے 61 نشتیں حاصل کی ہیں جبکہ مرکز کی حکمران جماعت بی جے پی کو صرف 8 نشستیں ملی ہیں اسی طرح گزشتہ 15 سال سے نئی دہلی پر حکومت کرنے والی کانگریس کوئی نشست حاصل نہیں کر سکی ہے۔

عام آدمی پارٹی کی اتنی بڑی کامیابی کے بعد کارکنان نے جشن منانا شروع کر دیا ہے۔