.

روسی صدر کا دورہ مصر، صدر السیسی سے ملاقات

شام کا بحران بات چیت کے ایجنڈے میں سرفہرست

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی صدر ولادی میر پوتن اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ دو روزہ دورے پر مصر پہنچے ہیں جہاں ان کے مصری ہم منصب فیلڈ مارشل ریٹائرڈ عبدالفتاح السیسی نے ان کا گرم جوشی سے استقبال کیا۔

غیر ملکی خبر رساں اداروں کی رپورٹس کے مطابق صدر ولادی میر پوتن اپنے مصری ہم منصب سے باہمی دلچسپی کے امور اور علاقائی و عالمی مسائل پر بات چیت کریں گے۔ دونوں صدور دوطرفہ تعاون کے مختلف سمجھوتوں پر بھی دستخط کریں گے مگر بات چیت میں شام کا بحران سر فہرست رہے گا۔ اس کے علاوہ فلسطین۔ اسرائیل تنازع، دہشت گردی اور انتہا پسندی اور مصر کو درپیش امن وامان کے مسائل پر بھی بات چیت کی جائے گی۔

خیال رہے کہ روسی صدر سوموار کی شب اپنے دو روزہ درے پر قاہرہ پہنچے تھے جہاں صدر عبدالفتاح السیسی نے ہوائی اڈے پر بنفس نفیش ان کا استقبال کیا۔ مصری حکام سے ملاقاتوں کے دروان صدر پوتن روس ۔ مصر تعلقات مستحکم کرنے پر بات چیت کریں‌ گے۔

ذرائع کے مطابق روسی صدر کے ہمراہ مصر آنے والے اعلیٰ اختیاراتی حکومتی وفد میں وزیرخارجہ سرگئی لافروف سمیت کئی دوسرے وزراء اور کاروباری شخصیات بھی شامل ہیں۔ توقع ہے کہ دونوں ملک دو طرفہ تجارت کے فروغ کے حوالے سے بھی اہم نوعیت کے سمجھوتوں‌ پر دستخط کریں‌ گے۔