.

امریکا:نارتھ کیرولینا میں تین مسلمان قتل

قاتل گرفتار ،پولیس نے قتل کے تین الزمات میں جیل بھیج دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں پولیس نے ریاست نارتھ کیرولینا کے شہر چیپل ہل میں تین نوجوان مسلمانوں کو قتل کرنے والے مشتبہ مسلح شخص کو گرفتار کر لیا ہے۔

پولیس نے مقتولین کے نام دیاح شیڈی برکات (عمر 23 سال) اس کی بیوی یسور محمد ابو صلحہ (عمر 21 سال) اور اس کی بہن رزان محمد ابو صلحہ(عمر 19 سال) بتائے ہیں۔امریکی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق انھیں قتل کرنے والے مسلح شخص کی شناخت کریگ اسٹیفن ہکس کے نام سے کی گئی ہے۔اس کی عمر 46 سال ہے اور اس نے خود کو پولیس کے حوالے کردیا ہے۔

اس کو قتل کے تین الزامات میں ڈرہم کاؤنٹی کی جیل میں بھیج دیا گیا ہے۔تاہم فوری طور پر قتل کے محرکات کا پتا نہیں چل سکا ہے۔تینوں مقتولین کی لاشیں ان کے گھر سے ملی تھیں۔انھیں گولیاں لگی ہوئی تھیں۔علاقے کے مکین پولیس کی وہاں آمد تک فائرنگ کے اس واقعے سے آگاہ نہیں تھے۔

چیپل ہِل پولیس نے اپنی ویب سائٹ پر ایک بیان جاری کیا ہے اور اس میں مذکورہ تینوں افراد کی فائرنگ کے نتیجے میں موت کی تصدیق کی ہے اور بتایا ہے کہ اس واقعے کے الزام میں ایک مشتبہ شخص سے تفتیش کی جارہی ہے۔پولیس نے اس یقین کا اظہار کیا ہے کہ علاقے میں عوام کو کوئی خطرہ لاحق نہیں ہے۔

ان تینوں نوجوان مسلمانوں کے قتل کی اطلاع منظرعام پر آنے کے بعد سوشل میڈیا پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا جارہا ہے۔تینوں مقتولین کی پڑھتے ہوئے اور باسکٹ بال کھیلتے ہوئے انٹرنیٹ پر تصاویر پوسٹ کی گئی ہیں۔تینوں کی اکٹھے ایک تصویر بھی ہے جو دیاح کی خواہر نسبتی رزان کی گریجوایشن کے موقع پر بنائی گئی تھی۔رزان کا انٹرنیٹ پر ایک بلاگ تھا۔اس میں اس نے بتایا تھا کہ اس کو فوٹو گرافی اور آرٹ میں دلچسپی ہے۔

انڈی پینڈینٹ کی رپورٹ کے مطابق رزان نے نارتھ کیرولینا یونیورسٹی میں گذشتہ موسم بہار میں ڈگری کی تعلیم کا آغاز کیا تھا اور وہ آرکٹیکچر اور ماحولیاتی ڈیزائن کے مضامین پڑھ رہی تھی۔

سوشل میڈیا پر بعض لوگوں نے اس واقعہ کو پیرس میں توہین آمیز خاکے شائع کرنے والے اخبار چارلی ہیبڈو کے دفاتر پر گذشتہ ماہ حملے کے مشابہ قرار دیا ہے اور صدر براک اوباما،دوسرے عالمی رہ نماؤں اور مذہبی شخصیات سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس واقعے کی مذمت کریں۔

ان تینوں کی یاد میں فیس بُک پر ''ہمارے تین فاتح '' کے نام سے ایک صفحہ بنا دیا گیا ہے۔اس صفحے پر پوسٹ کی گئی ایک تحریر میں لکھا ہے:''مہربانی فرما کر ایک دوسرے پر اعتماد کریں۔ان تینوں خوب صورت روحوں کو اپنے نیک جذبات اور دعاؤں میں یاد رکھیں۔ان کا عقیدہ ان کے لیے بہت کچھ تھا''۔ٹویٹر پر ''مسلم لائیوزمیٹر'' کے نام سے ہیش ٹیگ بنایا گیا ہے۔