.

شامی فوج کو 4 ہزار ایرانی، حزب اللہ جنگجوٶں کی مدد حاصل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی حکومت اور فوج کی مدد اور سیاسی مخالفین کو کچلنے کی کارروائیوں میں مدد فراہم کرنے والے حزب اللہ اور ایرانی جنگجوٶں کی تعداد اب چار ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔

حکومت مخالف فورسز کا کہنا ہے کہ درعا کے نواح میں دیر العدس کے مقام پر جن جن مقامات پر سرکاری فوج نے قبضہ کیا تھا، 'انقلابیوں' نے انہیں بشار الاسد نواز فوج کے چنگل سے آزاد کرا لیا ہے۔ یہ کامیابی گھمسان کی جنگ کے بعد انقلابیوں کے حصے میں آئی۔ ان معرکوں میں بڑے پیمانے پر جانی نقصان ہوا۔

ادھر ڈاکٹروں کی عالمی تنظیم 'ڈاکٹرز ود آٶٹ باڈرز' نے دمشق کے نواح میں مشرقی الغوطہ پر سرکاری فوج کی شدید بمباری کے بعد صحت کی صورتحال کو انتہائی ناگفتہ بہ قرار دے دیا ہے۔

دنیا بھر کے اطباء کی غیر سرکاری تنظیم کے ڈائریکٹر آپریشنز نے بتایا کہ ہمارے تعاون سے علاج کی سہولیات فراہم کرنے والے ہسپتال مریضوں اور زخمیوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کے پیش نظر ناکافی ہو گئے ہیں۔