.

تیونس:دہشت گردوں کے حملے میں چار پولیس اہلکار ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تیونس میں الجزائر کی سرحد کے نزدیک واقع شورش زدہ علاقے جبل الشعانبی میں دہشت گردوں کے حملوں میں چار پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔

تیونس کی وزارت داخلہ نے بدھ کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ ''یہ واقعہ قصرین گورنری کے علاقے بولعابہ میں پیش آیا ہے جہاں دہشت گردوں کے حملے میں نیشنل گارڈ کے چار ہیرو شہید ہوگئے ہیں''۔بیان میں حملے کی مزید تفصیل نہیں بتائی گئی ہے۔

بولعابہ کا علاقہ الجزائر کی سرحد کے نزدیک پہاڑی سلسلے جبل الشعانبی میں واقع ہے اور یہ علاقہ القاعدہ سے وابستہ جنگجو گروپ لشکرعقبہ بن نافع کا مضبوط گڑھ سمجھا جاتا ہے۔

اسی جنگجو گروپ پر گذشتہ سال جولائی میں جبل الشعانبی کےعلاقے میں تیونسی فوج پر حملے کا الزام عاید کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں پندرہ فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔اس علاقے میں جنگجوؤں کے حملے یا بارودی سرنگوں کے دھماکوں میں متعدد فوجی ہلاک یا زخمی ہوچکے ہیں۔

تیونس کی مسلح افواج نے سنہ 2012ء کے بعد سے اس گروپ کے خلاف متعدد فضائی حملے کیے اور زمینی کارروائی بھی کی ہے لیکن وہ اسلامی جنگجوؤں کا مکمل خاتمہ کرنے میں ناکام رہی ہیں۔واضح رہے کہ ان جنگجوؤں نے جنوری 2011ء میں تیونس میں سابق مطلق العنان صدر زین العابدین بن علی کی عوامی احتجاجی تحریک کے نتیجے میں اقتدار سے رخصتی کے بعد سر اٹھایا تھا۔