.

امریکا: فرگوسن میں احتجاج کے دوران فائرنگ، دو پولیس اہلکار زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ریاست میزوری کے قصبے فرگوسن میں دو پولیس سیاہ فام امریکیوں کے ساتھ نسلی تعصب برتنے کے خلاف احتجاج کے دوران گولی مار کر زخمی کردیا گیا۔

ابتدائی طور پر سینٹ لوئس پوسٹ کا کہنا تھا کہ دونوں پولیس افسران کو فرگوسن کے پولیس سٹیشن کے پاس گولی ماری گئی تھی۔ ان دونوں افسران کے صحت کے حوالے سے مزید کوئی تفصیل جاری نہیں کی گئی ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق دونوں پولیس افسر پولیس سٹیشن کے باہر احتجاج کے موقع پر تعینات تھے کہ انہیں دو سے چار گولیوں سے نشانہ بنایا گیا۔

اس سے پہلے فرگوسن کے پولیس چیف نے اپنے ایک افسر کی جانب سے ایک غیر مسلح سیاہ فام لڑکے مائیکل برائون کو فائرنگ کر کے ہلاک کرنے کے معاملے پر امریکی محکمہ انصاف کی رپورٹ سامنے آںے پر استعفیٰ دے دیا تھا۔

پچھلے سال گرمیوں کے دوران مائیکل برائون کو ایک سفید فام امریکی پولیس اہلکار ڈیرن ولسن نے گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا جس کے نتیجے میں احتجاج اور قومی سطح پر ردعمل کا سلسلہ شروع ہوگیا تھا۔ ڈیرن ولسن کو مائیکل برائون کی ہلاکت پر کسی مقدمے کا سامنا نہیں کرنا پڑا تھا۔