.

امریکی اداکار نے ہولناک داعشی وڈیوز دیکھنے کی وجہ بتا ہی دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی اداکار شوآن پین نے ایک حالیہ انٹرویو میں انکشاف کیا ہے کہ وہ دولت اسلامیہ عراق وشام [داعش] کی جانب سے مخالفین کے سر کاٹنے کی وڈیوز دیکھتے ہیں۔

پین کا کہنا ہے کہ وہ انتہاپسند گروپ کی جانب سے جاری کی جانے والی ہولناک پروپیگنڈا وڈیوز دیکھتے ہیں۔ داعش کی جانب سے جاری کردہ وڈیوز میں امریکی، برطانوی، کرد اور جاپانی شہریوں کو وحشیانہ طریقے سے زبح کرتے دکھایا جاتا رہا ہے۔

اداکار کے مطابق " مسئلہ یہ ہے کہ ہم اصل تشدد نہیں دیکھ پارہے ہیں۔ جب آپ جنگ کی اصل ہولناکی نہ دیکھ رہے ہوں تو یہ ایسا ہی ہے جیسے آپ سکون آور ادویات پر ہوں۔"

جب انٹرویو کار نے ان سے پوچھا کہ کیا وہ یہ وڈیوز دیکھنے کو اخلاقی پابندی سمجھتے ہیں تو انہوں نے جواب دیا کہ جی ہاں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ فلموں میں نقلی تشدد اور عراق و شام میں ہونیوالا اصلی تشدد ایک جیسے نہیں ہیں۔

"جو کوئی بھی ان وڈیوز کو دیکھتا ہے اور دعویٰ کرتا ہے کہ وہ پر تشدد فلموں سے ان میں وحشیانہ عمل دیکھنے کی سکت بڑھ چکی ہے اور انہیں یہ وڈیوز دیکھ کر ڈر محسوس نہیں ہوا ہے تو وہ شخص جھوٹا ہے یا اس کا کوئی وجود نہیں ہے۔"