.

سعودی عرب:دہشت گردی کے الزام میں 74 مشتبہ افراد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں حکام نے دہشت گردی کی سرگرمیوں میں ملوّث ہونے کے الزام میں چوہتر افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق دہشت گردی میں ملوّث ہونے کے الزام میں گرفتار کیے گئے چالیس افراد کے پاس کوئی شناختی دستاویزات نہیں تھیں۔ان کےعلاوہ گرفتار افراد میں ستائیس سعودی ،دو مصری ،دویمنی ،دو شامی اور ایک امریکی شامل ہے۔

ان افراد سے دہشت گردی کی سرگرمیوں اور سعودی عرب کی قومی سلامتی کے لیے خطرے کا موجب بننے کے الزام میں تفتیش کی جارہی ہے۔واضح رہے کہ سعودی عرب میں ایک اور امریکی کو فروری میں گرفتار کیا گیا تھا۔اس کے خلاف اپیل عدالت میں مقدمہ زیرسماعت ہے۔

سعودی دارالحکومت الریاض کی ایک خصوصی فوجداری عدالت نے گذشتہ ماہ دہشت گردی کے ایک سیل سے تعلق رکھنے والے دو افراد کو سزائے موت اور پچیس کو مختلف مدت کی قید کی سزائیں سنائی تھیں۔وہ چھتیس ارکان پر مشتمل دہشت گردی کے ایک سیل سے وابستہ تھے۔ان افراد کو مختلف جرائم میں ملوّث ہونے پر قصوروار قرار دیا گیا تھا۔

اس خصوصی فوجداری عدالت نے سترہ مشتبہ دہشت گردوں کو بھی جیل کی سزائیں سنائی تھیں۔یہ مجرم دو دہشت گرد گروپوں سے تعلق رکھتے تھے۔ان میں شامل ایک دہشت گردی نے گورنر مکہ مکرمہ کو قتل کرنے کی سازش تیار کی تھی۔

عدالت نے اس مجرم کومختلف جرائم میں قصوروار قرار دے کر تیئس سال قید کی سزا سنائی تھی۔ایک اور مشتبہ دہشت گرد کو بیس سال قید کی سزا سنائی گئی تھی اور اس پر رہائی کی صورت میں سفری پابندی عاید کردی تھی۔