.

یمن میں حوثی مخالف آپریشن کے سبب بندرگاہیں بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن نے سعودی عرب کی سربراہی میں حوثی باغیوں کے خلاف آپریشن 'فیصلہ کن طوفان' کے دوران تمام بڑی بندرگاہیں تجارت کے لئے بند کردی ہیں۔

ایک صنعتی ذرائع کا کہنا ہے کہ یمن میں صورتحال کی کشیدگی کی وجہ سے تمام بڑی بندرگاہیں بند کردی گئی ہیں۔ مقامی ذرائع نے بھی اس امر کی تصدیق کی ہے۔

ذرائع کے مطابق ان بندرگاہوں میں عدن، المکلاء، المخا، الحدیدہ کی بندرگاہیں شامل ہیں اور ان کے کھولنے کی کوئی تاریخ نہیں دی گئی ہے۔

یمن میں تیل کی اکثر پیداوار ملک کے شمالی حصے سے ہوتی جبکہ باقی تیل جنوبی علاقے میں شبوہ میں سے نکالا جاتا ہے۔

فرانسیسی آئل کمپنی ٹوٹل یمن میں سب سے بڑی غیر ملکی سرمایہ کار کمپنی ہے اور یہ بلحاف گیس ایکسپورٹ کو چلاتی ہے جس سے ایشیاء اور یورپ کو قدرتی گیس ایکسپورٹ کی جاتی ہے۔