.

یونیسکو کا یمن میں ثقافتی ورثے کا تحفظ یقینی بنانے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے سائنس وثقافت ’’یونیسکو‘‘ نے یمن میں جاری بحران کے تناظر میں تمام فریقین پر زور دیا ہے کہ وہ ملک میں موجود تاریخی مقامات اور ثقافتی ورثے کا تحفظ یقینی بنائیں۔

یونیسکو کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یمن کے دارالحکومت صنعاء کو اس کے تاریخی اور ثقافتی مقامات کی بدولت عالمی تاریخی مقامات میں شامل کیا گیا ہے۔ اس لیے موجودہ کشیدگی اور حالت میں جنگ میں تمام فریقین یمن کے ثقافتی ورثے کا تحفظ یقینی بنائیں۔

یونیسکو کی خاتون ڈائریکٹر ’’ایرینا بوکووا‘‘ نے فرانس کے صدر مقام پیرس میں میڈیا کو جاری ایک بیان میں کہا کہ ’’میں یمن کے عوام اور موجودہ کشیدگی میں شامل تمام فریقین سے پرزور مطالبہ کرتی ہوں کہ وہ ملک میں موجود تاریخی اور گراں قیمت ثقافتی ورثے کی حفاظت کو یقینی بنائیں اور جنگ میں تاریخی مقامات کو نقصان پہنچانےسے گریز کریں‘‘۔ ان کا کہنا تھا کہ فضائی حملوں کے دوران تاریخی مقامات کو غیر ارادی طورپر نقصان پہنچنے ک اندیشہ ہے، لہٰذا اس امر کا خیال رکھا جائے کہ بمباری میں ثقافتی مراکز کو نقصان نہ پہنچے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب نے جمعرات کے روز یمن حوثی باغیوں کے خلاف فضائی آپریشن’’ فیصلہ کن طوفان‘‘ شروع کیا ہے۔ یہ آپریشن اس وقت شروع کیا گیا جب حوثیوں نے صنعاء پرقبضے کے بعد جنوبی یمن کی طرف بھی پیش قدمی شروع کردی تھی، جہاں عدن شہرمیں صدر عبد ربہ منصور ھادی عارضی طورپر پناہ لیے ہوئے تھے۔