.

عرب اتحادیوں کی حوثیوں کے خلاف محاذ جنگ پر کامیابی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے یمن کے چوتھے بڑے شہر الحدیدہ کے نزدیک حوثی باغیوں کی فضائی دفاعی بریگیڈ 630 پر بمباری کی ہے۔

العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق اتحادی طیاروں نے منگل کو سابق صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار ملیشیا کے دارالحکومت صنعا کے مغرب میں میزائلوں کے ایک ڈپو کو بھی تباہ کر دیا ہے۔انھوں نے صنعا کے جنوب مشرق میں واقع علی عبداللہ صالح کے آبائی قصبے سنحان پر بمباری کی ہے۔

درایں اثناء فوجی ذرائع نے بتایا ہے کہ صدر عبد ربہ منصور ہادی کی اتحادی عوامی مزاحمتی فورسز نے جنوبی صوبے لحج میں تزویراتی اہمیت کے حامل العند ائیربیس پر قبضہ کر لیا ہے۔

ادھر جنوبی شہر عدن میں حوثی باغیوں اور صالح کے وفاداروں نے شہری علاقوں پر گولہ باری جاری رکھی ہوئی ہے اوراس کے نتیجے میں کم سے کم دو سو افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ان میں زیادہ تعداد عام شہریوں کی ہے۔

سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی ممالک گذشتہ تیرہ روز سے یمن میں حوثی شیعہ باغیوں اور ان کے اتحادی شورش پسندوں کے خلاف فضائی حملے کررہے ہیں۔سعودی عرب نے حوثی ملیشیا کی دارالحکومت صنعا پر قبضے اور جنوبی شہر عدن کی جانب پیش قدمی کے بعد صدر عبد ربہ منصور ہادی کی اپیل پر26 مارچ کو فضائی حملوں کا آغاز کیا تھا۔

حوثیوں کی ملک کے منتخب صدر کے خلاف بغاوت کے بعد تشدد کے واقعات میں بھی نمایاں اضافہ ہوا ہے اور اس وقت پورا ملک ہی طوائف الملوکی اور خانہ جنگی کی آگ میں جل رہا ہے۔